The news is by your side.

Advertisement

گرمی کی حالیہ لہر : قومی ادارہ صحت کا ہیٹ ویو سے متعلق ایڈوائزری کے اجرا کا فیصلہ

اسلام آباد : قومی ادارہ صحت نے گرمی کی حالیہ لہر کے پیش نظر ہیٹ ویو سے متعلق ایڈوائزری کے اجرا کا فیصلہ کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق قومی ادارہ صحت نے ہیٹ ویو سے متعلق ایڈوائزری کے اجرا کا فیصلہ کرلیا۔

ذرائع این آئی ایچ کا کہنا ہے کہ ملک کے مختلف حصوں میں درجہ حرارت میں نمایاں اضافہ ریکارڈ ہوا ہے ، ہیٹ ویو ایڈوائزری وفاق وصوبائی حکومتوں کو جاری ہوگی۔

ایڈوائزری میں کہا گیا ہے کہ گرمی کی حالیہ لہر کے پیش نظر ہیٹ اسٹروک کے خدشات بڑھ گئے، ہیٹ ویو کے پیش نظر پیشگی حفاظتی انتظامات ناگزیر ہیں۔

قومی ادارہ صحت نے کہا ہے کہ ہیٹ ویوایڈوائزری کا مقصد متعلقہ حکام کوقبل ازوقت خبردارکرنا ہے، متعلقہ حکام ہیٹ اسٹروک سے متعلق عوامی شعور اجاگر کریں۔

ایڈوائزری میں کہنا ہے کہ بروقت اقدامات نہ کرنے پر ہیٹ اسٹروک جان لیوا ہوسکتا ہے، ہیٹ اسٹروک ہائیپوتھرمیا کی ایک قسم ہے، اس کے دوران انسانی وجود کا ٹمپریچر بڑھ جاتا ہے۔

ایڈوائزری میں ہدایت کی کہ شہری ہیٹ اسٹروک سےبچاؤکیلئےدھوپ میں جانےسےگریزکریں، ہیٹ اسٹروک سے ڈی ہائیڈریشن کا خدشہ ہوتا ہے۔

قومی ادارہ صحت کا کہنا تھا کہ انسانی جلد کا لال، خشک، گرم ہونا ، بخار، سر درد، چکر، دانے، تھکاوٹ ہیٹ اسٹروک کی علامات ہیں اور بروقت علاج معالجہ نہ ہونےپرہیٹ اسٹروک جسمانی اعضا متاثر کرتا ہے اور ہیٹ اسٹروک جان لیوا ہوسکتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں