The news is by your side.

Advertisement

نواز شریف نے قومی سلامتی کمیٹی کا اعلامیہ مسترد کر دیا

اسلام آباد : سابق وزیراعظم نوازشریف نے قومی سلامتی کمیٹی کا اعلامیہ مسترد کرتے ہوئے کہا کہ اعلامیہ افسوس ناک اور تکلیف دہ ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں احتساب عدالت کے باہرمیڈیا سے غیررسمی گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے قائد نے کہا کہ پتہ لگنا چاہیےملک میں دہشت گردی کی بنیاد کس نے رکھی تھی۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ آج ملک کوکیا بنا دیا گیا ہے، دنیا میں ہم تنہا ہوچکے ہیں، کون سا ملک آج ہمارے ساتھ ہے؟، اب پتہ لگنا چاہیےکہ ملک کواس نہج پرکس نے پہنچایا۔

مسلم لیگ ن کے قائد نوازشریف نے کہا کہ اگر قومی کمیشن قائم ہوتا ہے تو اس کی ضرورت ہے، دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہونا چاہیے۔

نوازشریف نے کہا کہ نیشنل سیکورٹی کمیٹی کے اجلاس میں گھرٹھیک کرنی کی بات کوڈان لیکس بنا دیا گیا، انہوں نے ڈان لیکس کی بھی تصدیق کردی۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ خواجہ آصف سے پوچھیں جب جب وہ غیر ملکی دوروں پر گئے، بیرون ممالک کے صدوراور وزرائےاعظم نے میری بات کی۔

پھانسی دے دی جائے، مگر ووٹ کی عزت پامال نہیں ہونے دوں گا: نواز شریف

خیال رہے کہ گزشتہ روزبونیرمیں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے قائد نوازشریف کا کہنا تھا کہ مجھے غدار کہنے والو، حساب کتاب کے لیے قومی کمیشن بنا دو، قومی کمیشن اپنی رپورٹ میں جسے مجرم کہے، اسے سرعام پھانسی دے دی جائے، مگر ووٹ کی عزت پامال نہیں ہونے دوں گا۔

قومی سلامتی کمیٹی نے نوازشریف کا بیان متفقہ طور پر مسترد کردیا

یاد رہے کہ گزشتہ روز قومی سلامتی کمیٹی نے نوازشریف کا بیان متفقہ طور پر مسترد کردیا تھا اور نوازشریف کے بیان کو غلط اور گمراہ کن قرار دیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں