The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں غیر ملکی ملازمین پر نئی تلوار لٹکنے لگی

ریاض: سعودی عرب میں تارکین وطن ملازمین کے سر پر تلوار لٹکنے لگی، مملکت نے غیر ملکی ملازمین کے لیے قوانین مزید سخت کرتے ہوئے قید اور جرمانے کی سزاؤں کی منظوری دے دی۔

وزارت محنت کے نئے قانون کے مطابق کام سے راہ فرار اختیارکرنے والے ہروب کارکن کو بلیک لسٹ کردیا جائے گا اور اس کے سعودی عرب میں داخلے پرتاحیات پابندی عائد کردی جائے گی۔

وزارت محنت اور جوازات (محکمہ پاسپورٹ)کے نئے قانون میں ایسا غیرملکی ملازم جو اپنے آجر کے پاس کے بجائے کسی دوسری جگہ ملازمت کرے گا وہ غیر قانونی عمل کے زمرے میں آئے گا اور اس پر وزارت کا قانون لاگو ہوگا ۔

ہروب والے کارکنوں پر سزا کا اطلاق تمام پیشوں پر ہوگا جس میں گھریلو ملازمین، فیملی ڈرائیور، خادمہ، فیملی نرس اور ہوم ٹیوٹر وغیر شامل ہیں۔

ہروب والے کارکن پر تاحیات مملکت میں داخلے پر پابندی عائد ہوگی اور اسے بے دخل کردیا جائے گا جب کہ 50 ہزار ریال جرمانہ اور 6 ماہ قید بھی ہوگی۔

اس کے ساتھ ساتھ غیر قانونی طور پر غیر ملکی کارکن اور ہروب والے کارکن کو ملازمت دینے والے شخص اور ادارے کو بھی قانون کے شکنجے میں لایا جائے گا اور اس پر قانون کی خلاف ورزی کے تحت 6 ماہ قید اور ایک لاکھ ریال جرمانہ عائد کیا جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں