The news is by your side.

Advertisement

دہشت گردی کا شکار باپ بیٹے کی تدفین کرائسٹ چرچ میں کی جائے گی، دفتر خارجہ

اسلام آباد: ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا ہے کہ نیوزی لینڈ دہشت گردی واقعے میں شہید ہونے والے باپ بیٹے کی تدفین کرائسٹ چرچ میں کی جائے گی، دہشت گردی کے متاثرین کے اہل خانہ ویزا کی درخواست دے سکتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق نیوزی لینڈ میں گزشتہ روز ہونے والے افسوسناک سانحے کے نتیجے میں شہید ہونے والوں میں 6 پاکستانی بھی شامل ہیں، ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ نعیم رشید اور ان کے بیٹے طلحہ کی تدفین کے انتظامات مکمل کرلیے گئے ہیں، ان کی تدفین کرائسٹ چرچ میں کی جائے گی۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق نیوزی لینڈ میں پاکستانی کمیونٹی، ہائی کمیشن نے انتظامات کرنے میں تعاون کیا، مزید 4 شہید پاکستانیوں کے جسد خاکی پاکستان لانے کے انتظامات کررہے ہیں۔

مزید پڑھیں: کرائسٹ چرچ حملے کے ہیرو نعیم راشد کی والدہ کی عمران خان سے اپیل

ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا کہ نیوزی لینڈ میں شہید افراد کے لواحقین کے لیے ویزا معاونت کی جائے گی، شہدا کے قریبی لواحقین ویزا اینڈ امیگریشن سائٹ پر درخواست جمع کراسکتے ہیں، پاکستان میں نیوزی لینڈ کے اعزازی قونصلر ویزا میں معاونت کریں گے۔

قونصل جنرل کو درخواست ای میل [email protected] کی جاسکتی ہے، نیوزی لینڈ ویزا کے لیے درخواست 03428200200 پر واٹس ایپ بھی کی جاسکتی ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز آسٹریلوی شہری برینٹن ٹرنٹ نے نیوزی لینڈ کی دو مساجد میں اندھا دھند فائرنگ کرتے ہوئے 46 نمازیوں کو شہید کردیا تھا، ملزم پر فرد جرم عائد کردی گئی ہے، شہید ہونے والوں میں 6 پاکستانی شہری بھی شامل ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں