The news is by your side.

Advertisement

نیوزی لینڈ کی پارلیمنٹ کا شہدائے کرائسٹ چرچ کوزبردست خراج عقیدت

اجلاس کا آغازتلاوت کلام پاک سے ہوا

کرائسٹ چرچ: نیوزی لینڈ کی وزیراعظم جیسنڈا ایرڈن کا کہنا ہے کہ حملہ آور دہشت گرد، مجرم اور انتہا پسند ہے۔

تفصیلات کے مطابق سانحہ کرائسٹ چرچ کے بعد نیوزی لینڈ کی پارلیمنٹ کے پہلے اجلاس کا آغاز تلاوت قرآن مجید سے ہوا۔ ممبران نے سانحے کے سوگ میں ایک منٹ خاموشی اختیارکی۔

وزیراعظم جیسنڈا ایرڈن نے پارلیمنٹ سے خطاب کا آغاز ’’اسلام وعلیکم‘‘ سے کیا اور سانحہ کرائسٹ چرچ کے متاثرین سے یکجہتی کا اظہار کیا۔

نیوزی لینڈ کی کابینہ نے اسلحہ قوانین میں تبدیلی کا فیصلہ کرلیا، جیسنڈا آرڈرن

نیوزی لینڈ کی وزیراعظم نے مساجد میں موجود مسلمانوں کو دہشت گرد سے بچاتے ہوئے اپنی جان قربان کرنے والے شہید نعیم راشد کو خراج عقیدت پیش کیا۔

جیسنڈا ایرڈن نے حملہ آور کو دہشت گرد، مجرم اور انتہا پسند قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس شخص کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی ہوگی۔

نیوزی لینڈ کی وزیراعظم نے کہا کہ دہشت گرد حملے سے متعلق تحقیقات جاری ہیں، ملک میں ہائی الرٹ برقرار ہے۔

نیوزی لینڈ کی 2 مساجد میں فائرنگ‘ 49 افراد جاں بحق

واضح رہے کہ 15 مارچ کو نیوزی لینڈ کی دو مساجد میں دہشت گرد حملے کیے گئے جس کے نتیجے میں خواتین وبچوں سمیت 49 افراد جاں بحق اور 20 زخمی ہوئے تھے۔

مرکزی حملہ آور کی شناخت 28 سالہ برینٹن ٹیرنٹ کے نام سے ہوئی ہے اور وہ آسٹریلوی شہری ہے جس کی تصدیق آسٹریلوی حکومت نے کردی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں