The news is by your side.

بیرون ملک پیدا ہونے والے بچے ماؤں کے ساتھ کویت واپس آنے سے قاصر

کویت سٹی: کویت میں رہائشی افراد کے حال ہی میں بیرون ملک پیدا ہونے والے بچے کویت آنے سے قاصر ہوگئے جس سے 400 خاندان شدید مشکلات کا شکار ہیں۔

کویت نیوز کے مطابق درجنوں تارکین وطن کو ایک شدید انسانی مسئلے کا سامنا ہے جس کی بڑی وجہ ان کی اپنے نوزائیدہ بچوں کو کویت لانے میں ناکامی ہے کیونکہ وہ حال ہی میں پیدا ہوئے تھے جب مائیں گرمیوں کی چھٹیوں پر تھیں۔

ایسا اس لیے ہو رہا ہے کیونکہ وزارت داخلہ نے اگلے نوٹس تک فیملی ڈیپنڈنٹ اور وزٹ ویزوں سمیت ہر قسم کے ویزوں کے اجرا پر پابندی لگانے کا فیصلہ جاری کیا ہے۔

ان والدین نے ایک مقامی عربی روزنامے کے ساتھ اپنے انٹرویو کے دوران وزارت داخلہ سے درخواست کی ہے کہ وہ نوزائیدہ بچوں کو انسانی ہمدردی کے پہلو کو مدنظر رکھتے ہوئے اپنے فیصلے سے مستثنیٰ قرار دے۔

تقریباً 400 کے قریب کیسز جن میں زیادہ تر تعداد اسکول ٹیچرز کی ہے اس درخواست کے ساتھ مجاز محکمے کو جمع کروائے گئے ہیں جن میں کہا گیا ہے کہ نومولود بچوں کو اس فیصلے سے خارج کیا جائے۔

درجنوں تارکین وطن نے وزارت داخلہ سے مطالبہ کیا کہ وہ ایک ایسے انسانی مسئلے کو دیکھیں جو ان کے لیے تشویش کا باعث ہے اور ان کے بیرون ملک پیدا ہونے والے نوزائیدہ بچوں سے متعلق ان کو پریشان کر رہا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ ان کے مذکورہ بچے ان کے آبائی ممالک میں موسم گرما کی تعطیلات کے دوران پیدا ہوئے ہیں اور یہ کویت میں مجاز حکام کے لیے نئے طریقہ کار کے ساتھ موافق ہے جو اس وقت نافذ العمل ہیں جس کی وجہ سے ایسے ماں یا باپ ملازمت چھوڑنے اور کویت سے باہر نومولود کے ساتھ رہنے پر مجبور ہو رہے ہیں۔

تارکین وطن کا کہنا ہے کہ وہ اپنی آواز مجاز اتھارٹی تک پہنچانے، اپنے نوزائیدہ بچوں کی ملک میں داخلے کے حوالے سے استثنیٰ حاصل کرنے اور ان کی خاندانی زندگی کو لاحق خطرے کی روشنی میں ان کے حالات کو ہمدردی اور انسانیت کے ساتھ دیکھنے کی خواہش کرتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں