The news is by your side.

Advertisement

جسے فوٹوگرافر چیتا سمجھتا رہا وہ کیا نکلا؟ سب حیران رہ گئے

نئی دہلی : بھارتی محکمہ جنگلی حیات کا اہلکار جسے بلیک پینتھر (چیتا) سمجھتا رہا وہ درحقیقت نایاب نسل کا نلگیری مارٹن نکلا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق بھارتی ریاست کرناٹکا کے جنگلات میں محکمہ جنگلی حیات کی سدھا نامی اہلکار نے منفرد جانور دیکھا جسے وہ بلیک پینتھرسمجھی اور اس کی ویڈیو بنانا شروع کردی۔

نلگیری مارٹن نامی جانور درحقیقت ہوبہو بلیک پینتھر کی طرح دکھ رہا تھا لیکن جیسے جیسے اس جانور نے حرکت شروع کی تو سدھا کو معلوم ہوا کہ یہ بلیک پینتھر نہیں بلکہ نلگیری مارٹن ہے جس کے گلا زرد رنگ کا ہوتا ہے۔

نلگیری مارٹن، ایک نایاب نسل کا جانور ہے جو صرف جنوبی بھارت کے مخصوص حصے میں پایا جاتا ہے اور مذکورہ نسل بھی وبائی مرض کے باعث معدومیت کا شکار ہے۔

محکمہ جنگلی حیات کی اہلکار کا کہنا تھا کہ مذکورہ جانور صرف چھوٹے پرندے اور جانور کھاتا ہے لیکن اس نے کبھی بھی انسانوں پر حملہ نہیں کیا اور نا ہی ایسا کوئی واقعہ رپورٹ ہوا۔

غیر ملکی میڈیا کا کہنا ہے کہ جب سے مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر پر نلگیری مارٹن کی ویڈیو شیئر ہوتے ہی وائرل ہوگئی، جسے اب تک 34800 صارفین دیکھ چکے ہیں جبکہ اس ویڈیو کو 2200 لائک مل چکے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں