The news is by your side.

Advertisement

سندھ کی جیلوں میں 92خواتین قتل کے سنگین مقدمات میں قید ہیں

کراچی : سندھ کی جیلوں میں92خواتین قتل کے سنگین مقدمات میں قیدہیں اور بچہ جیلوں میں 162قیدی موجودہیں جبکہ اغوابرائےتاوان کےجرم میں 3011قیدیوں کوسزامل چکی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ کی جیلوں میں قید خواتین و بچوں سے متعلق اعداد و شمار جاری کردیئے گئے ، اعداد و شمار میں بتایا گیا سندھ کی جیلوں میں92 خواتین قتل کے سنگین مقدمات میں قیدہیں۔

اعداد و شمار کے مطابق سب سے زیادہ ضلع غربی کی 12 خواتین ملزمان قتل کے مقدمات میں گرفتار ہیں، کراچی و سطی وجنوبی کی 18 خواتین پر قتل کا سنگین الزام ہے اور مختلف جیلوں میں قید ہیں۔

سندھ کی 23 جیلوں میں 71خواتین قیدیوں پر قتل کے سنگین مقدمات زیر سماعت ہے ، 21 خواتین قیدیوں کو قتل کے جرم میں سزا ہوچکی ہے جبکہ ملیر ضلع سے تعلق رکھنے والی 4 خواتین قتل کے مقدمات میں سزا یافتہ ہیں۔

اعدادوشمار کے مطابق 16 تا 17 سال کی عمر کے 27 بچے جیل میں قید جبکہ 18 سال تک کے 132 قیدی مختلف الزامات پر جیلوں میں ہیں۔

مزید پڑھیں : محکمہ جیل خانہ جات کا سندھ میں جیلوں کی ابتر صورتحال کا اعتراف

سندھ بھرکی بچہ جیلوں میں 162قیدی موجودہیں اور اغوا برائے تاوان کے جرم میں 3011 قیدیوں کو سزا مل چکی ہے۔

یاد رہے گذشتہ سال نومبر میں محکمہ جیل خانہ جات نے سندھ کی جیلوں سے متعلق رپورٹ جاری کی تھی، جس میں جیلوں کی ابتر صورتحال کا اعتراف کیا گیا تھا، رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ سینٹرل جیل کراچی کی گنجائش 2400 ہے لیکن اس وقت وہاں 4 ہزار 846 قیدی موجود ہیں جبکہ کراچی کی ملیر جیل میں گنجائش سے 3 ہزار 449 زائد قیدی موجود ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں