متنازع خبر سیکیورٹی لیکس نہیں‌ تھی، چوہدری نثار -
The news is by your side.

Advertisement

متنازع خبر سیکیورٹی لیکس نہیں‌ تھی، چوہدری نثار

اسلام آباد: وزیر داخلہ چوہدری نثار نے کہا ہے کہ ڈان اخبار کی انتظامیہ سے کہہ دیا کہ وہ سر ل المیڈا کو ایک ہفتے میں وطن واپس بلالیں، صحافی اور ایڈیٹر کو تحقیقاتی کمیٹی کے سامنے پیش کیا جائےگا، متنازع خبر پر سیاست نہ چمکائی جائے، اس خبر میں صداقت نہیں یہ سیکیورٹی لیک نہیں جھوٹی لیک ہے۔


Asked Dawn’s editor to call Cyril Almeida back… by arynews

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کے دوران انہوں نے کہا کہ انگریزی اخبار ڈان کی انتظامیہ کو کہہ دیا ہے کہ وہ ایک ہفتے میں سرل المیڈا کو امریکا سے وطن واپس بلا کر کمیٹی کے سامنے پیش کریں، انتظامیہ نے یقین دہانی کرادی ہے کہ سرل المیڈا ایک ہفتے میں وطن واپس پہنچ جائیں گے۔

انہوں نے اس خبر کے ذریعے سیاست چمکانے والوں کو بھی آڑے ہاتھوں لیا اور کہا کہ جو لوگ اس معاملے کے ذریعے اپنے سیاسی مقاصد حاصل کرنا چاہتے ہیں میں انہیں باور کراتا ہوں کہ کوئی اور دکان داری کریں کوئی اور راستہ ڈھونڈیں، یہ خبر سیکیورٹی لیکس نہیں تھی یہ جھوٹی لیکس ہے۔

انھوں نے بتایا کہ ڈی جی آئی ایس آئی اور وزیر اعلیٰ شہباز شریف میں کبھی بھی تلخ کلامی نہیں ہوئی،نان سٹیٹ ایکٹرز پر ساڑھے تین سال میں 34  ملاقاتیں ہو چکی ہیں اور وہ ہر ملاقات میں موجود تھے، اس معاملے پر کبھی نہ تلخی ہوئی اور نہ دو رائے ہیں۔

وزیرا داخلہ نے کہا کہ یہ جھوٹی خبر ہے اور اس پر کمیٹی اس لیے بنی کیونکہ یہ پاکستان کا بیانیہ نہیں ہے۔

یہ پڑھیں:اکتیس اکتوبر کے واقعات کی ذمہ دار خود تحریک انصاف ہے، چوہدری نثار

 انہوں نے مزید کہا کہ  بھارت ہر چیز کا الزام پاکستان پر عائد کردیتا ہے متنازع خبر کے ذریعے ایک جھوٹ کو سچ ثابت کرنے کی کوشش کی گئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں