The news is by your side.

Advertisement

پاکستان میں دہشتگردی کا کوئی نیٹ ورک کام نہیں کررہا ، چوہدری نثار

اسلام آباد: وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان کا کہنا ہے کہ پاکستان سے تمام دہشتگرد نیٹ ورکس کو ختم کردیا، کوئی کچھ بھی کہے سول ملٹری تعلقات مثالی ہیں ۔

اسلام آباد میں کابینہ اجلاس کے بعد پریس بریفنگ میں چوہدری نثار علی خان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی زمین سے کوئی دہشتگرد نیٹ ورک آپریٹ نہیں کررہا، وزیر داخلہ نے کہ ماضی کے دو فوجی آپریشنز میں حکومتی نااہلی کے باعث دہشتگردی میں اضافہ ہوا۔

 وزیر داخلہ نے بتایا کہ سالوں بعد بلوچستان میں بات چیت شروع کردی گئی ہے،چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ مدارس محب وطن ہیں،کسی کو کافر یا واجب القتل کہنے کی اجازت نہیں دیں گے۔

چوہدری نثار نے کہا کہ کہ کراچی میں جرائم اور دہشتگردی پر ستر فیصد قابو پالیا، وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ کچھ معاملات ایسے ہیں جن کو عوامی سطح پر شیئر نہیں کرسکتے۔

چوہدری علی خان کا کہنا تھا میں نےآرمی چیف سے کہا کہ شہروں کی سیکیورٹی کے لیے فوج دیں، تعداد نہیں بتاؤں گا لیکن آج چاروں صوبوں میں فوج موجود ہے اور چاروں صوبوں میں کاؤنٹرٹیررازم فورس ایک ایک ہزار کی تعداد میں بھی موجود ہے، چاروں صوبوں میں پاک فوج تھرڈ لائن آف ڈیفنس ہے،اس وقت 9 ملٹری کورٹس فنکشنل ہیں،دہشت گردی کے تمام نیٹ ورکس توڑ دیے ہیں۔

چوہدری نثار نے کہا ہے کہ دہشتگردی کے خلاف نیشنل ایکشن پلان پر عملدر آمد سے کامیابیاں حاصل ہوئی ہیں۔ نو ماہ میں ایک ہزار دہشتگرد مار گرائے جبکہ کراچی میں ستر فیصد امن قائم ہوا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں