The news is by your side.

Advertisement

پرویز الہٰی، دوست مزاری کے خلاف تحریک عدم اعتماد پر عمل درآمد نہ ہو سکا

لاہور: پنجاب میں نئے آئینی بحران کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے، پنجاب اسمبلی کے اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر کے خلاف تحریک عدم اعتماد پر عمل درآمد تاحال نہیں ہو سکا ہے۔

تفصیلات کے مطابق قواعد و ضوابط کے تحت 3 دن، اور 7 دن میں تحریک عدم اعتماد پر عمل کرنا ہوتا ہے، لیکن 10 روز گزرنے کے باوجود عدم اعتماد کی دونوں تحریکوں پر عمل درآمد نہیں ہو سکا ہے۔

خیال رہے کہ اسمبلی رولز پروسیجر کے تحت عدم اعتماد جمع ہونے کے بعد اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر اجلاس کی صدارت نہیں کر سکتے۔

دوست مزاری کے خلاف 6 اپریل اور پرویز الہٰی کے خلاف 7 اپریل کو تحریک جمع کرائی گئی تھی، ڈپٹی اسپیکر دوست مزاری کے خلاف پی ٹی آئی جب کہ اسپیکر پرویز الہٰی کے خلاف ن لیگ نے تحریک جمع کروائی۔

ڈپٹی اسپیکر نے 18 اپریل کو اجلاس طللب کر کے اسے منسوخ کر دیا تھا، پی ٹی آئی اور ن لیگ نے تحریک پر عمل درآمد نہ ہونے پر عدالت سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں