The news is by your side.

Advertisement

شاہدخاقان عباسی کی بطور وزیراعظم نامزدگی سندھ ہائیکورٹ میں چیلنج

کراچی : مسلم لیگ ن کی جانب سے شاہدخاقان عباسی کی بطوروزیراعظم نامزدگی سندھ ہائیکورٹ میں چیلنج کردی گئی۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائیکورٹ میں مسلم لیگ ن کی جانب سے شاہدخاقان عباسی کی بطوروزیراعظم نامزدگی چیلنج کردی، درخواست میں مؤقف اپنایا گیا ہے شاہدخاقان عباسی پر کرپشن کے سنگین الزامات ہیں، شاہد خاقان صادق و امین کی تعریف پر پورا نہیں اترتے۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ شاہد خاقان نے بطور وزیر پٹرولیم ایل این جی معاہدوں میں کرپشن کی، شیخ عمران کو غیر قانونی طور ایم ڈی پی ایس او مقرر کیا گیا، نوازشریف کی مداخلت پر شاہد خاقان کیخلاف نیب انکوائری روکی گئی۔

درخواست گزار نے استدعا کی کہ شاہد خاقان کو وزیراعظم کے عہدے کیلئے نااہل قرار دیا جائے، شاہدخاقان کے کاغذات نامزدگی مسترد کئے جائیں، نیب کو شاہد خاقان کیخلاف ازسرنو تحقیقات کا حکم دیا جائے۔


مزید پڑھیں : نامزد وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے خلاف سپریم کورٹ میں درخواست دائر


اس سے قبل سپریم کورٹ آف پاکستان میں نامزد وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کےخلاف درخواست دائر کی گئی، جس میں ان کی نامزدگی چیلنج کردی گئی، درخواست گزار نے درخواست میں موقف اپنایا کہ شاہد خاقان عباسی کے خلاف ایل این جی درآمد کا معاملہ نیب میں زیرالتوا ہے، مقدمے میں ملوث شخص کی نامزدگی غیر قانونی ہے لہٰذا ان کی نامزدگی کالعدم قراردی جائے۔

یاد رہے کہ نواز شریف کی نا اہلی کے بعد مسلم لیگ ن کی جانب سے شاہد خاقان عباسی کو عبوری وزیر اعظم جبکہ شہبازشریف کو مستقل وزیراعظم بنانے کا فیصلہ کیا تھا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق شاہد خاقان عباسی کو 45دنوں کے لیے وزیر اعظم بنایا جائے گا، جس کے بعد مستقل طور پر شہباز شریف کو وزیر اعظم بنایا جائے گا۔

واضح رہے کہ پاناما کیس میں سپریم کورٹ نے نوازشریف کو نااہل قرار دیا تھا اور نواز شریف ، حسن، حسین، مریم نواز، کیپٹن صفدر اور اسحاق ڈار کے خلاف نیب میں ریفرنس بھیجنے اور چھ ماہ میں فیصلہ کرنے کا حکم دیا۔


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئرکریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں