The news is by your side.

Advertisement

رواں سال حج ہوگا یا نہیں، حتمی فیصلہ کب کیا جائے گا؟

اسلام آباد: وفاقی وزیرمذہبی امورنورالحق قادری کا کہنا ہے کہ حج ہوگا یا نہیں حتمی فیصلہ رمضان کے آخر میں کیا جائے گا، سعودی عرب کے ساتھ مل کرکئی آپشنز پر غور کررہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیرمذہبی امورنورالحق قادری کی اٹارنی جنرل سے ملاقات ہوئی ، جس میں نورالحق قادری نے کہا کہ حج ہوگا یا نہیں حتمی فیصلہ رمضان کے آخر میں کیا جائے گا، ہماری کوشش اورخواہش ہےکہ حج ہوجائے۔

وفاقی وزیرمذہبی امور کاکہنا تھا کہ سعودی عرب کےساتھ مل کرکئی آپشنزپرغورکررہےہیں، وزارتی امورپراٹارنی جنرل سےمشاورت کرنےآیاتھا۔

یاد رہے وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری نے کہا تھا کہ 15 رمضان تک حج ہونے یا نہ ہونے کا فیصلہ ہوجائے گا، سعودی حکومت کرونا کے پھیلاؤ کو مکمل طور پر دیکھ رہی ہے، سعودی وزارت حج نے فی الوقت حج معاہدہ کرنے سے روک رکھا ہے۔

ان کا کہنا تھا سعودی حکومت کے پاس حج ادائیگی سے متعلق مختلف آپشنز زیر غور ہیں جن میں سعودی عرب میں رہنے والے صرف حج کی سعادت حاصل کرسکیں، صرف گلف ممالک کے حجاج حج کی سعادت حاصل کرنا شامل ہیں۔

وزیر مذہبی امور کے مطابق تمام ممالک کے کوٹے کو صرف دس فیصد تک لیا جاسکتا ہے، سعودی حکومت حج سے متعلق پاکستان کو اعتماد میں لے کر فیصلہ کرے گی۔

نور الحق قادری کا کہنا تھا کہ تاریخ میں 40 مرتبہ سے زائد حج مکمل یا جزوی طور پر نہیں ہوا، سمجھتا ہوں حالات بہتر ہوجائیں تو حج ہوگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں