The news is by your side.

Advertisement

چیک پوسٹ پر حملے کے متاثرہ افراد کے لیے امدادی پیکج کا اعلان

پشاور: وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ محمود خان نے گزشتہ ہفتے چیک پوسٹ پر حملے کے متاثرہ افراد کے لیے امدادی پیکج کا اعلان کردیا، جاں بحق افراد کے لواحقین کو 25 لاکھ اور زخمیوں کو 10، 10 لاکھ روپے معاوضہ دیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق شمالی وزیرستان میں گزشتہ ہفتے چیک پوسٹ پر حملے کے متاثرہ افراد کے لیے امدادی پیکج کا اعلان کردیا گیا ہے۔ امدادی پیکج کا اعلان وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ محمود خان کی جانب سے کیا گیا ہے۔

وزیر اعلیٰ کا کہنا ہے کہ جاں بحق افراد کے لواحقین کو 25 لاکھ روپے امدادی پیکج دیا جائے گا۔ زخمیوں کو 10، 10 لاکھ روپے معاوضہ دیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ کچھ عناصر پختونوں کو جنگ میں دھکیلنے کی ناکام کوشش کر رہے ہیں، یہ کوشش کسی بھی صورت کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ پختونوں کے نام پر سیاست کرنے والے کبھی کامیاب نہیں ہوں گے۔

محمود خان کا کہنا تھا کہ عوام، پاک فوج اور اداروں کی قربانیوں کی بدولت امن قائم ہوا۔ امن برقرار رکھنے کے لیے کسی قسم کی قربانی سے دریغ نہیں کیا جائے گا۔ تمام اضلاع کے مسائل حل کرنا صوبائی حکومت کی ذمہ داری ہے۔

انہوں نے کہا کہ مسائل کے حل کے لیے ترجیحی بنیادوں پر دن رات محنت جاری ہے، سب پختونوں کے مسائل حل کرنے کے لیے سنجیدہ ہیں۔ 10 ماہ میں قبائلی اضلاع کے کئی مسائل حل کر چکے ہیں۔

خیال رہے کہ گزشتہ ہفتے رکن قومی اسمبلی محسن داوڑ اور علی وزیر نے مسلح ساتھیوں کے ساتھ مل کر میران شاہ کے علاقے بویا میں پاک فوج کی چیک پوسٹ پر حملہ کیا تھا، فائرنگ میں گل خان سمیت پاک فوج کے 5 جوان زخمی ہوئے تھے جبکہ فائرنگ کے تبادلے میں مزید تین افراد جان کی بازی ہار گئے تھے۔

اکسا کرحملہ کروانے کے بعد محسن داوڑ معصوم لوگوں کو ڈھال بناتے ہوئے فرارہوگیا جبکہ علی وزیر کو 8 ساتھیوں سمیت گرفتار کر لیا گیا تھا۔

30 مئی کو محسن داوڑ کو بھی پاک افغان سرحدی علاقے شمالی وزیرستان سے ایک بڑے آپریشن کے دوران گرفتار کرلیا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں