site
stats
عالمی خبریں

براک اوباماکوفرانس کےصدارتی انتخاب لڑنے کی دعوت

پیرس : سابق امریکی صدر براک اوباما کوفرانس کے صدارتی انتخابات لڑنے کو کہاجارہاہےجس کے لیےہزاروں لوگوں نے ان کی حمایت کا اعلان کیا ہے۔

تفصیلات کےمطابق فرانس میں آن لائم مہم کےذریعے سابق امریکی صدر کو فرانس کے صدارتی انتخابات لڑنے کی دعوت دی جارہی ہے جس کے لیے اب تک 42000افراد لوگوں نے ان کی حمایت کی ہے۔

o1

آن مہم کے پوسٹروں پر سابق امریکی صدر براک اوباماکے2008کے صدارتی انتخابات کا نعرہ ’ہم کرسکتے ہیں‘ فرانسیسی زبان میں لکھا ہوا ہے۔

غیرملکی میڈیاسے بات کرتے ہوئےاس مہم سے وابستہ ایک شخص کا کہناتھاکہ ہم اس مہم کے ذریعےامیدواروں کو یہ پیغام دینے کی کوشش کررہے ہیں کہ آئندہ ماہ ہونے والے صدارتی انتخابات کے لیے ان میں سے کوئی بھی متاثر کن امیدوار نہیں ہے۔

o2

فرانس میں انتہائی دائیں بازو کی رہنما ماری لی پین صدارتی انتخابات میں اب تک کہ سب سےمضبوط امیدوار سمجھی جارہی ہیں جبکہ ان کے مقابلے میں دائیں بازو کے امیدوارفرانسوا فیلن کو مالی اسکینڈل کا سامنا ہے جس سے اس سے ماری لی پین کی برتری اور واضح ہوتی نظر آرہی ہے۔

یاد رہےکہ سابق امریکی صدر براک اوباما چونکہ فرانس کے شہری ہی نہیں ہیں اس لیے وہ انتخاب میں حصہ لینے کے اہل ہی نہیں۔

o3

مزید پڑھیں:فرانسیسی صدرکاانتخابات میں حصہ نہ لینےکااعلان

واضح رہےکہ گزشتہ سال دسمبر میں فرانس کے صدر فرانسوا اولاند نےدوبارہ انتخاب میں حصہ نہ لینے کا اعلان کر کے سب کو حیران کردیاتھا۔

o4

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top