The news is by your side.

Advertisement

اسلام آباد ہائی کورٹ بھی کرونا سے محفوظ نہ رہ سکا

اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت میں کرونا کے وار جاری ہے، اسلام آباد ہائی کورٹ بھی کرونا کی لپیٹ میں آگئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق جوڈیشل کمپلیکس اسلام آباد میں کرونا کا ایک اور کیس سامنے آ گیا ہے، جہاں احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کےعملےکا ایک رکن کرونا میں مبتلا ہوگیا ہے۔

عملے کے رکن کا کرونا ٹیسٹ مثبت آنے جج محمد بشیر نے فوری طور پر عدالت اور چیمبر کو ڈس انفیکٹ کرانے کا حکم دیا، جج محمد بشیر نے ہدایت کی کہ عدالتی عملے کی بھی تعداد کو کم کیا جائے۔

دوسری جانب اسلام آباد ہائیکورٹ کے لا افسران بھی کرونا وائرس میں مبتلا ہوگئے ہیں، ڈپٹی اٹارنی جنرل ارشد محمود کیانی اور ڈپٹی اٹارنی جنرل راجہ خالدمحمود کا کرونا ٹیسٹ مثبت آگیا ہے۔

کرونا ٹیسٹ مثبت آنے پر دونوں لا افسران نے خود کو گھروں پر قرنطینہ کرلیا ہے۔

واضح رہے کہ ملک بھر میں کرونا کی تیسری لہر خوفناک صورت اختیار کرتی جارہی ہے، چوبیس گھنٹے میں مہلک وبا کے مزید 4 ہزار سے زائد کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔

این سی او سی کا کہنا ہے کہ 24 گھنٹے میں ملک بھر میں 41 ہزار 699 کرونا ٹیسٹ کیے گئے جس میں سے 4 ہزار 400 ٹیسٹ مثبت آئے، نئے کیسز رپورٹ ہونے کے بعد ملک میں کرونا کے ایکٹو کیسز کی تعداد 64 ہزار 373 ہوگئی۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کا کہنا ہے کہ گزشتہ چوبیس گھنٹے میں کرونا کیسز رپورٹ ہونے کی شرح 9.60 فیصد رہی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں