The news is by your side.

Advertisement

اسلام فوبیا کے اسباب پرغور کرنے کے لیے اوآئی سی کا ایگزیکٹو اجلاس طلب

شاہ محمود قریشی آج شام ترکی روانہ ہوں گے، وزیراعظم 25 کو چین جائیں گے

اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بیجنگ میں ایک اہم اجلاس منعقد ہورہا ہے جس میں 36 ممالک شریک ہوں گے، چین نے وزیراعظم عمران خان کو بھی شرکت کی دعوت دی ہے، اسلام اور مسلمانوں کو درپیش نفرت کے سدباب کے لیے استنبول میں او آئی سی کا اجلاس بلایا گیا ہے۔

تفصیلات کےمطابق شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ اجلاس 25 سے 27 مارچ تک جاری رہے گا، پاک چین تعلقات ہمیشہ مثالی رہے ہیں، پلوامہ واقعے کے بعد پیدا ہونے والے بحران میں چین ہمیشہ کی طرح ہمارے ساتھ کھڑا رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں پلوامہ میں 44 جانوں کے ضیاع پر افسوس ہے،پلوامہ واقعہ کےتحقیقات میں سنجیدہ ہیں،بھارتی ڈوزیئرکامطالعہ کررہےہیں۔دیکھیں توسمجھوتاایکسپریس میں بھی 44پاکستانیوں کی جانیں گئیں تھیں، کیس میں اپنےملوث ہونےکااعتراف کرنےوالےسوامی آنند سمیت چار افراد بھی چھوڑدیاگیا۔

بھارت نے نیوزی لینڈ سانحے کی مذمت تو کی لیکن مساجد کا تذکرہ تک نہیں کیا۔بھارت میں کروڑوں مسلمان رہتے ہیں لیکن ان کا تذکرہ کرتے ہوئے بھارت کو سکتہ کیوں ہوجاتا ہے۔

نیوزی لینڈ سانحے پر انہوں نے کہا کہ وہاں 9 پاکستانیوں سمیت مختلف ممالک کے پچاس افراد شہید ہوئے ۔ شہید پاکستانی شہری کو سلام پیش کرتےہیں جس نےبہت سی جانیں بچانےمیں کرداراداکیا۔شہیدپاکستانی کےکردارکونیوزی لینڈکی وزیراعظم نےبھی سراہا،وزیرخارجہ ،دہشت گردی کسی نسل یا مذہب سےمنسلک نہیں ہے۔

انہوں نے بتایا کہ دہشت گردی کے واقعات میں مسلمانوں کو قصور وار ٹھہرائے جانے کے اسباب جاننے کے لیے او آئی سی کا ایگزیکٹو اجلاس طلب کیا ہے۔ پاکستان اور ترکی نے اس معاملے پر شروعات کی ہے۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ وہ آج شام استنبول روانہ ہورہے ہیں۔غورکیاجائےگاکہ اسلام اورمسلمانوں کوکیوں نشانہ بنایاجارہاہے۔

ان کا کہنا تھا کہ مسلمانوں کےخلاف کچھ ہوتواسےانفرادی فعل قراردیاجاتاہے،خدانخواستہ کچھ اورہوجائےتو اسے سوچی سمجھی منصوبہ بندی قراردے دیاجاتاہے۔

انہوں نے بتایا کہ مہاتیرمحمدکوہم نےیوم پاکستان پریڈپرمہمان خصوصی بننےکی دعوت دی تھی جو انہوں نے قبول کی اور وہ آج شام پاکستان آرہے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں