The news is by your side.

Advertisement

روس یوکرین جنگ کے بدترین اثرات، خام تیل کی قیمتیں ریکارڈ10 سال کی بَلندی کو چھونے لگیں

نیویارک : بین الاقوامی منڈی میں خام تیل کی قیمت دس سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ، خام تیل پہلی بار 119 ڈالر 84 سینٹ فی بیرل کا ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق روس یوکرین جنگ کے عالمی معیشت پر بدترین اثرات سامنے آنے لگے، بین الاقوامی منڈی میں خام تیل کی قیمتیں ریکارڈ دس سال کی بَلندی کو چھونے لگیں۔

برطانوی خام تیل کی قیمت چھ ڈالر پچاسی سینٹ اضافے کے بعد پہلی بار بَلند ترین سطح ایک سو انیس ڈالر چوراسی سینٹ فی بیرل تک پہنچ گئی۔

ویسٹ ٹیکساس کی قیمت میں بھی پانچ ڈالراکیاسی سینٹ کا اضافہ ہوا، جس سے ڈبلیو ٹی آئی خام تیل ایک سوسولہ ڈالر ستاون سینٹ فی بیرل پر فروخت ہونےلگا۔

ماہرین کا کہنا ہے یورپ میں خام تیل کی سپلائی بحال نہ ہوئی تو قیمتوں میں مزید اضافہ ہو سکتا ہے جبکہ امریکا میں بھی تیل کے ذخائر بیس سال کی کم ترین حد تک پہنچ چکے ہیں۔

دوسری جانب روس کے یوکرئن پر حملے کےفوری بعد یورپ اور امریکہ کی بڑی تیل کی کمپنیاں عرب ممالک سے تیل خریدنے پر مجبور ہوگئی ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق عالمی توانائی کی سلامتی خطرے میں ہے، بحالی کے نازک مرحلے کے دوران عالمی معیشت کو خطرہ لاحق ہے۔ سعودی عرب جو اوپیک کے تیئس ممالک کی صدارت کر رہا ہے، اپریل دوہزار بائیس کیلئے چار لاکھ ٹن تک کی پروڈکشن بڑھانے کیلئے کوشش تیز کر دی، دوسری میٹنگ اکتیس مارچ کو ہو گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں