The news is by your side.

Advertisement

حکومت اور اپوزیشن کا منظور متنازع آرڈیننس منسوخ کرنے پر اتفاق

اسلام آباد: حکومت اور اپوزیشن نے منظور متنازع آرڈیننس منسوخ کرنے پر اتفاق کر لیا ہے، اپوزیشن نے بھی ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری کے خلاف تحریک عدم اعتماد واپس لینے کا اعلان کردیا۔

تفصیلات کے مطابق ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری کی زیرصدارت اجلاس میں منظور کیے گئے آرڈیننس کے حوالے سے حکومت اور اپوزیشن کے درمیان معاملات طے پاگئے جس کے بعد اپوزیشن نے قاسم خان سوری کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک واپس لینے کا اعلان کردیا۔

قومی اسمبلی میں منظور متنازع آرڈیننس منسوخ کر دیے جائیں گے، حکومت، اپوزیشن اتفاق رائے سے متنازع آرڈیننس منظور کریں گے۔

مسلم لیگ ن کے رکن قومی اسمبلی خواجہ آصف نے کہا کہ ڈپٹی اسپیکر کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک واپس لے رہے ہیں، تمام آرڈیننس بلڈوز کیے گئے تھے وہ سارے واپس لیے جا رہے ہیں، آج جو ہوا ہے اس دن ہوتا تو تلخی سے نہیں گزرنا ہوتا۔ انہوں نے مزید کہا کہ خوش اسلوبی سے تمام آرڈیننس اب واپس لیے جا رہے ہیں، کمیٹی اب ان امور کو دیکھے گی۔

وزیر دفاع پرویز خٹک نے اپوزیشن کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ کل بھی میٹنگ تھی آج بھی ہے جس کا اچھا نتیجہ نکلا ہے، جو فیصلے یہاں ہوں گے وہ متفقہ ہوں گے، ہمارے مستقبل کے لیے بہترین فیصلہ آج ہوا ہے، اللہ کرے اسمبلی بہتر طریقے سے چلے۔

مسلم لیگ ن کے رہنما سردار ایاز صادق نے کہا کہ میری کوشش ہوگی کمیٹیز کو مضبوط بنائیں، ہم چاہتے ہیں پارلیمنٹ بہتر طریقے سے چلے۔

اپوزیشن نے ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی کے خلاف تحریک عدم اعتماد جمع کرا دی

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے اپوزیشن نے ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم سوری کے خلاف تحریک عدم اعتماد جمع کرائی تھی، تحریک میں کہا گیا تھا کہ ڈپٹی اسپیکر نے آئین اور قواعد کی خلاف ورزی کی ہے، ڈپٹی اسپیکر ارکان اسمبلی کا اعتماد کھو چکے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں