The news is by your side.

Advertisement

متحدہ عرب امارات کا سرکاری اور پرائیوٹ ملازمین کے لئے یکساں نظام کا اعلان

ابوظبی: متحدہ عرب امارات نے سرکاری اور پرائیوٹ ملازمین کے نظام کو یکساں بنانے کے لئے ملک کی سب سے بڑی قانونی اصلاحات کا اعلان کردیا ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق متحدہ عرب امارات کی انسانی وسائل کی وزارت نے لیبر قانون میں نئی دفعات شامل کی ہیں جن کے زریعے سرکاری اور پرائیوٹ ملازمین کے نظام کو یکساں بنایا جائے گا۔

ان نئی دفعات کی منظوری متحدہ عرب امارات کے صدر شیخ خلیفہ بن زاید النیہان نے دی، یہ نئی دفعات 40 قوانین کے ساتھ متحدہ عرب امارات کی سب سے بڑی قانونی اصلاحات کا حصہ ہیں۔

دو فروری سے نافذ ہونے والے ان دفعات کے تحت تمام سرکاری اور غیر سرکاری ملازمین کو ایک جیسی سہولیات میسر ہونگی جن میں ایک یکساں چھٹیاں ، مستقل یا عارضی طور پر کام کرنے کے ماڈل اپنانے کی اجازت شامل ہوگی۔

نئے قانون کے مطابق یو اے ای کی لیبر مارکیٹ میں محدود معاہدے لاگو ہونگے، ملک بھر کے ملازمین کو انسداد دفعات کے تحت تحفظ فراہم کیا جائے گا جو ملازمت دینے والے کو رنگ ، نسل یا کسی معذوری کی بنا پر رد کرنے سے روکے گا۔

متحدہ عرب امارات کے انسانی وسائل کے وزیر عبدالرحمان الاوارنے میڈیا بریفنگ میں بتایا کہ سرکاری اور غیر سرکاری ملازمتوں کے نظام کو یکساں بنانے کا مقصد ملک بھر کے ملازمین کے حقوق کا تحفظ اور انہیں کام کرنے کے لئے ایک سازگار ماحول فراہم کرنا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں