اپیکٹا، پاکستان نے3 سونے اور 6 چاندی کے تمغےجیتے -
The news is by your side.

Advertisement

اپیکٹا، پاکستان نے3 سونے اور 6 چاندی کے تمغےجیتے

تائی پی : پاکستان نے ایشیاپیسیفک آئی سی ٹی الائنس ایوارڈ 2016 کی تقریب میں تین گولڈ اور 6 چاندی کے تمغے جیت لیے۔

پاکستان میں آئی ٹی کے شعبے سے تعلق رکھنے والے اداروں نے بہترین کارکردگی پر یہ ایوارڈز تائیوان کے شہر تائی پی میں ہونے والی سوفٹ ویئر ہاؤس ایسوسی ایشن فار آئی ٹی اینڈ آئی ٹی ای ایس کے زیر اہتمام ایک تقریب میں حاصل کیے۔

سونے کا دو تمغے نیشنل یونیورسٹی سائنس اینڈ ٹیکنالوجی (نسٹ) کے نوجوان طلبا کے دو گروہ نے الگ الگ پروجیکٹس پر حاصل کیے جب کہ تیسرا سونے کا تمغہ ایک نجی کمپنی نے حاصل کیا۔

نسٹ کی ایک ٹیم نے اپنے منصوبے ‘کلینکل ڈسیجن سپورٹ سسٹم فار ڈائیگنوسس آف موومنٹ ڈس آرڈر’ کے لیے جب کہ دوسری ٹیم نے ‘اینالسس آف آپٹکل کوہرینس ٹوموگرافی امیج فار سی ڈی ایس ایس’ میں سونے کے تمغے جیتے،طالب علموں کو ان منصوبوں کے لیے سابق انٹیلی جنس افسران کی غیر منافع بخش تنظیم کا تعاون حاصل تھا۔

مقابلوں میں پاکستان کی 28 ٹیموں نے حصہ لیا جبکہ ایشیائی خطے کے 17 ممالک کی 236 ٹیمیں شامل تھیں اور جج کے فرائض 60 سے زائد ٹیکنالوجی ماہرین نے ادا کئے۔

خیال رہے پاکستان کی آئی ٹی کمپنیوں کی ایجادات کو نمایاں کرنے لیے پاکستان سوفٹ ویئرہاؤس ایسوسی ایشن کا 41 رکنی وفد تائی پے میں چار روزہ 16 ویں سالانہ اپیکٹا ایوارڈز تقریب میں شرکت کے لیے گیا تھا۔

یاد رہے کہ پاکستان سوفٹ ویئرہاؤس ایسوسی ایشن فار آئی ٹی اینڈ آئی ٹی ای ایس کا قیام 1992 میں عمل میں آیا تھا اور اس کے اراکین کی ایک بڑی تعداد ہے جو ملک بھر میں 450 سے زائد کمپنیوں پر مشتمل ہے۔

اس تنظیم کا بنیادی مقصد پاکستان میں سوفٹ ویئر اور سروس انڈسٹری کو فروغ اور ترقی دینے اور اپنے اراکین کے حقوق کا تحفظ کرنا ہے۔

واضح رہے کہ ایشیا پیسفک آئی سی ٹی الائنس ایوارڈ (اپیکٹا ایوارڈ) ایک عالمی ایوارڈ پروگرام ہے جس کا مقصد عوام میں انفارمیشن اور کمیونی کیشن ٹیکنالوجی کے حوالے سے آگاہی فراہم کرنے کے علاوہ خطے میں آئی سی ٹی انویٹرز اور اپنے کاروبار کرنے والے حضرات کے لیے نیٹ ورک اور پروڈکٹ کے بے پناہ مواقع فراہم کرنا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں