The news is by your side.

Advertisement

استاد چھوٹے غلام علی خان کی برسی

کلاسیکی موسیقی اور گائیکی میں استاد چھوٹے غلام علی خان پاکستان کے‌ نام ور‌ فن کاروں‌ میں شمار کیے جاتے تھے۔ آج ان کا یومِ وفات ہے۔ 29 دسمبر 1986ء کو لاہور میں وفات پانے والے استاد چھوٹے غلام علی خان کا تعلق قصور کے ایک ایسے گھرانے سے تھا جو موسیقی اور گائیکی کے لیے مشہور تھا۔

استاد چھوٹے غلام علی خان 1910ء میں پیدا ہوئے تھے۔ موسیقی کی ابتدائی تربیت اپنے والد میاں امام بخش سے حاصل کی جو دھرپد انداز گائیکی میں اختصاص رکھتے تھے۔ استاد چھوٹے غلام علی خان خیال، ترانہ، ٹھمری، دادرا اور غزل سبھی یکساں مہارت سے گاتے تھے۔

انھوں نے کلاسیکی موسیقی کو پاکستان میں‌ فروغ دینے اور اس کی تربیت کے لیے بھی کام کیا۔ وہ اس حوالے سے لاہور آرٹس کونسل سے وابستہ رہے جہاں موسیقی کی تربیت کے لیے اپنی اکیڈمی قائم کی تھی۔

چھوٹے غلام علی خان کے شاگردوں میں شاہدہ پروین اور بدرالزماں، قمر الزماں کے نام نمایاں ہیں۔

حکومتِ پاکستان نے 1985ء میں انھیں صدارتی تمغہ برائے حسن کارکردگی عطا کیا تھا۔

پاکستان میں‌ موسیقی اور گائیکی کے فن میں نام و مقام بنانے والے استاد چھوٹے غلام علی خان کو لاہور میں میانی صاحب کے قبرستان میں سپرد خاک کیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں