The news is by your side.

Advertisement

حکومت اور عوام کورونا کے باعث بدترین حالات کیلئے تیار رہیں، طبی ماہرین کا انتباہ

کراچی :پاکستان اسلامک میڈیکل ایسوسی ایشن نے لاک ڈاؤن میں منصوبہ بندی کے بغیر سہولت پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے حکومت اورعوام کوروناکے باعث بدترین حالات کیلئے تیار رہیں۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان اسلامک میڈیکل ایسوسی ایشن نے لاک ڈاؤن میں منصوبہ بندی کے بغیر سہولت پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے حکومت سے فیصلے پر نظرثانی کی اپیل کردی۔

پاکستان اسلامک میڈیکل ایسوسی ایشن کا کہنا تھا کہ بےہنگم ہجوم اورایس اوپی پرعمل نہ کراناقابل تشویش ہے، ہیلتھ کیرسسٹم کمزوراورحکومت کی عدم توجہ کاشکارہے، کوروناانفکیشن سےہماراہیلتھ سسٹم تباہ ہونےکاامکان ہے، حکومت اورعوام کوروناکےباعث بدترین حالات کیلئےتیار رہیں۔

گذشتہ روز کورونا ایکسپرٹ ایڈوائزری گروپ نے بھی لاک ڈاؤن میں نرمی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا خبردار کیا تھا کہ عیدتک کیسز بڑھیں گے۔

وائس چانسلر ڈاکٹرجاوید اکرم کا کہنا تھا کہ عید تک کیسزمیں ریکارڈ اضافہ ہو سکتا ہے اور دوبارہ سخت لاک ڈاؤن کی طرف جانا پڑ سکتا ہے اور اپیل کی حکومت ایس او پیزپرعمل کرائے۔

وائس چیئرمین ایڈوائزری گروپ اسداسلم نے کہا تھا کہ لاک ڈاؤن کھلنےسےکیسز بڑھ گئے، کوروناعلامات کیساتھ گھرپررہنے،ٹیسٹ نہ کرانےسےاموات بڑھیں، بازارکھلنےسےکوروناکی منتقلی کاعمل بڑھ گیا، مارکیٹوں اور دکانوں کو دن میں دو بار کلوری نیٹ کیا جائے۔

پروفیسر جاوید حیات کا کہنا تھا کہ سماجی فاصلے نہ رکھے گئے توشدید مشکل میں آ سکتے ہیں، جولائی تک کیسز کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہو گا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں