The news is by your side.

Advertisement

بھارت کو شدید دھچکہ، ٹویٹر اب پاکستانی صارفین کے اکاؤنٹس معطل نہیں کرے گا

اسلام آباد : سماجی میڈیا پر بھارتی اجارہ داری کو شدید دھچکہ لگا، حکومت پاکستان اور ٹویٹر انتظامیہ کے مابین معاملات طے پا گئے ہیں، اب ٹویٹر آئندہ یکطرفہ طور پر پاکستانی صارفین کے اکاؤنٹس معطل نہیں کرے گا۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین نیشنل آئی ٹی بورڈ صباحت علی شاہ نے امریکہ میں ٹویٹر کے اعلیٰ حکام سے تفصیلی ملاقات کی اور ٹویٹر پر بھارتی اجارہ داری سے پاکستانی صارفین کی آواز دبانے کا معاملہ اٹھایا۔

انتظامیہ نے بھارتی اجارہ داری کیخلاف حکومت پاکستان کا مؤقف تسلیم کرتے ہوئے اکاؤنٹس کی معطلی کا طریقہ کار تبدیل کردیا ہے۔

حکومت پاکستان اور ٹوئٹر انتظامیہ میں معاملات طے پاگئے ، معاہدے کے مطابق ٹویٹر انتظامیہ کسی بھی شکایت کی صورت میں حکومت پاکستان سے رابطہ کرے گی اور آئندہ یکطرفہ طورپرپاکستانی صارفین کے اکاؤنٹس معطل نہیں کرے گا۔

خیال رہے کشمیر پر بھارت کے 5 اگست کے غاصبانہ قبضے کے بعد ٹویٹر کے ذریعے بھارتی غنڈہ گردی میں تیزی آئی اور اہل کشمیر کے حق میں آواز اٹھانے پر سینکڑوں پاکستانیوں کے ٹویٹر اکاؤنٹس بلاک کئے گئے تھے، جس پر حکومت پاکستان نے ٹویٹر کے اعلیٰ حکام سے رابطہ کیا۔

مزید پڑھیں : سوشل میڈیا پر مقبوضہ کشمیرکے لیے آواز اٹھانے والے178 پاکستانیوں کے اکاؤنٹس معطل

یاد رہے بھارتی وزارتِ داخلہ کی جانب سے ٹویٹر انتظامیہ سے درخواست کی گئی تھی کہ پاکستان سے تعلق رکھنے والے آٹھ ٹویٹر اکاؤنٹ بند کردیےجائیں، جس کے بعد سوشل میڈیا پر مقبوضہ کشمیریوں کےلیےآواز اٹھانے والےایک سواٹھہتر پاکستانیوں کے اکاؤنٹس معطل کردیئے تھے۔

پی ٹی اے نے صارفین کی شکایت ملنے پر ٹوئٹر انتظامیہ کو خط لکھا تھا۔

مقبوضہ کشمیر کے متعلق کئے گئے ٹوئٹس پر پاکستانی صارفین کے ٹویٹر اکاﺅنٹس بلاک کرنے کے حوالے سے پی ٹی اے نے ٹوئٹر کو 333 اکاؤنٹس کی تفصیلات فراہم کی تھیں اور اس حوالے سے مشترکہ لائحہ عمل کی تیاری کے لیے ٹویٹر انتظامیہ کو ایک میٹنگ کے لیے دعوت دی گئی تھی۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں