The news is by your side.

Advertisement

ٹیلی ویژن اور فلم نگری کے خوش قامت، خوب رُو اور باکمال اداکار اظہار قاضی کی برسی

پاکستان ٹیلی ویژن اور فلم انڈسٹری کے مشہور اداکار اظہار قاضی 24 دسمبر 2007ء کو اس جہانِ فانی سے رخصت ہوئے۔ آج ان کی برسی ہے۔

اظہار قاضی 1957ء میں کراچی میں پیدا ہوئے تھے۔ جامعہ کراچی سے تعلیم مکمل کرنے کے بعد انھوں نے پاکستان اسٹیل ملز سے اپنی عملی زندگی کا آغاز کیا۔ 1984ء میں انھوں نے پاکستان ٹیلی وژن کی ایک ڈراما سیریز دائرہ میں تھکن کے نام سے پیش کی گئی کہانی میں مختصر کردار نبھایا تھا۔ یہی ان کی فنی زندگی کا آغاز تھا۔

اس ڈرامے میں اظہار قاضی نے اپنی اداکاری سے ٹیلی ویژن پروڈیوسروں کو اپنی طرف متوجہ کرلیا۔ نام وَر پروڈیوسر قاسم جلالی نے انھیں اپنی ڈراما سیریل گردش اور انا میں کردار نبھانے کا موقع دیا اور اس خوش قامت، خوب رُو فن کار نے اپنی صلاحیتوں کو ایک بار پھر منوا لیا۔ انھوں نے بعد میں متعدد ڈراموں میں اداکاری کے جوہر دکھائے اور شہرت حاصل کی۔

1985ء میں فلم ساز اور ہدایت کار نذر شباب نے انھیں اپنی فلم روبی میں بطور ہیرو کاسٹ کر لیا۔ اس فلم نے گولڈن جوبلی مکمل کی اور اظہار قاضی فلم نگری میں بھی کام یاب ہوئے۔ انھوں نے 87 فلموں میں کام کیا جن میں اردو زبان میں 30، پنجابی کی 26 اور تین فلمیں پشتو زبان میں تھیں۔ ایشیا کے ٹائیگر اظہار قاضی کی آخری فلم تھی جو ان کی وفات کی وجہ سے مکمل نہ ہوسکی۔

اظہار قاضی مردانہ وجاہت اور خوب صورت ہیر اسٹائل کے سبب بھی ناظرین میں مقبول ہوئے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں