The news is by your side.

Advertisement

جنسی ہراسگی کے الزام میں گرفتار پاکستانی باعزت بری

دبئی : متحدہ عرب امارات کی عدالت نے چینی خاتون کو جنسی طور پر ہراساں کرنے کے الزام میں گرفتار پاکستانی شہری کو باعزت بری کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات کی ریاست دبئی کی عدالت نے جنسی ہراسگی کیس کی سماعت کرتے ہوئے رہائشی عمارت کی لفٹ میں خاتون کو ہراساں کرنے الزام میں گرفتار پاکستانی شخص کو باعزت بری کردیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ جنسی ہراسگی کیس میں گرفتار کارپینٹر کا کام کرنے والے 28 سالہ پاکستانی شہری پر الزام تھا کہ اس نے لفٹ کے اندر شکایت کنندہ کے ساتھ زبردستی کرنے کی کوشش کی ہے۔

دبئی پولیس کا کہنا تھا کہ مذکورہ واقعے کی رپورٹ رواں برس مارچ کی 7 تاریخ کو نائف پولیس اسٹیشن میں درج ہوئی تھی۔

پولیس نے عدالت کو بتایا کہ 42 سالہ چینی خاتون نے شکایت درج کروائی تھی کہ ’میں نائف ایریا میں رات ساڑھے 11 بجے اپنی دکان بند کرکے گھر کی جانب جارہی کہ مجھے محسوس ہوا کہ کوئی میرا پیچھا کررہا ہے، جو اپنے حلیے سے پاکستانی لگ رہا تھا۔

عدالتی دستاویزات کے مطابق خاتون نے پولیس کو بیان دیا کہ 28 سالہ نوجوان نے لفٹ کے بند ہوتے ہی مجھے پکڑ کر جنسی طور پر ہراساں کرنے لگا، جس پر میں نے اسے دھکا دیا اور چیخ کر کہا کہ تم مجھے جانتے ہو، تو ملزم نے کہا میں تمھیں جانتا ہوں۔

متاثرہ چینی خاتون نے دعویٰ کیا تھا کہ ’میرے شور مچانے پر میرا پڑوسی باہر آیا لیکن تب تک ملزم موقع سے فرار ہوچکا تھا، اس لیے واقعے کا کوئی عینی شاہد نہیں ہے‘۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ پولیس نے ملزم کو واقعے کے روز ہی گرفتار کرلیا تھا، لیکن پاکستانی شہری نے خاتون کو پہنچاننے اور خاتون کو جنسی طور پر ہراساں کرنے سے انکار کردیا تھا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ پولیس آفیسر نے عدالت میں بیان دیا کہ’ملزم نے دوران تفتیش واقعے کے روز مذکورہ عمارت میں جانے بھی انکار کیا تھا‘۔

پولیس ترجمان کا کہنا تھا کہ چینی خاتون کے شکایت درج کروانے کے بعد ملزم کو سی سی ٹی وی فوٹیج کے ذریعے گرفتار کیا گیا تھا، تاہم پولیس نے عدالت کے حکم پر ملزم کو باعزت بری کردیا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں