The news is by your side.

کینیا میں مقیم پاکستانیوں کو ارشد شریف کی موجودگی کا علم اور پاکستانی حکام لاعلم ؟ سوالات اٹھ گئے

اسلام آباد : نیروبی میں مقیم پاکستانیوں کو ارشد شریف کی موجودگی کا علم تھا تو کیا پاکستانی ہائی کمیشن کو ارشد شریف کی موجودگی کا علم نہیں ہوگا؟ سوالات اٹھ گئے۔

تفصیلات کے مطابق سینئرصحافی ارشد شریف اپنے خلاف مقدمات کے اندراج اور پھر دھمکیاں ملنے پرپاکستان سے گئے اور کچھ روز دبئی میں قیام کیا پھر انہیں کینیا جانا پڑا۔

جس کے بعد ارشد شریف کہاں ہیں یہ کیسے ہوسکتا ہے پاکستانی حکام کو علم نہ ہو مگر کینیا میں مقیم پاکستانی ارشدشریف کو جانتے تھے اور انہیں یہ بھی معلوم تھا ارشد شریف کینیا میں رہائش پذیر ہیں۔

کینیا میں پاکستانی برادری ارشد شریف سے اتنی واقف تھی کہ ڈالمن پلازہ مارکیٹ میں انہیں شناخت کیا اور سیلفی بنانے کی خواہش کا اظہار بھی کیا۔

ایسی صورتحال میں کینیا میں رہنے والے پاکستانیوں کو ارشد شریف کے بارے میں علم تھا تو سوال یہ ہے کیا نیروبی میں پاکستانی ہائی کمیشن اور پاکستانی ہائی کمشنر کو ارشدشریف کی موجودگی کا علم نہیں تھا؟

اگر پاکستانی ہائی کمیشن ارشد شریف کے کینیا میں قیام سے متعلق باخبر تھا تو کیا پاکستان میں حکام کوآگاہ کیا گیا تھا؟ اس معاملے کی تحقیقات ہونی چاہئے۔

ارشدشریف کے کینیا میں ہونے سے متعلق وہاں موجود مٹھی بھر پاکستانی شہریوں کو اگرعلم تھا تو یہ کیسے ہوسکتا ہے وفاقی وزیرداخلہ راناثناءاللہ کو علم نہ ہو؟

اس معاملے پر سوال اٹھنے لگے ہیں کہ کیا رانا ثناء اللہ حقائق چھپا رہے ہیں؟ کیا راناثنا معاملےکو کوئی اور رُخ دینےکی کوشش تو نہیں کررہے؟

Comments

یہ بھی پڑھیں