The news is by your side.

اسرائیلی فوجیوں کےآگ ڈٹ جانےوالی فلسطینی لڑکی کوقید کی سزا

یروشلم : قابض اسرائیلی فوجیوں کو تھپڑ رسید کرنے والی فلسطینی لڑکی احد تمیمی کو اسرائیل کی فوجی عدالت نے آٹھ ماہ قید کی سزا سنا دی۔

تفصیلات کے مطابق فوجی عدالت نے 17 سالہ فلسطینی لڑکی احد تمیمی کو اسرائیلی فوجیوں کو تھپڑ مارنے کے الزام میں 8 ماہ قید اور 5 ہزار شیکلز یعنیٰ 1430 ڈالرز جرمانے کی سزا سنا دی۔

احد تمیمی کی وکیل گیبسی لیسکی کے مطابق ان کی موکلہ نے 12 میں سے 4 الزامات قبول کیے ہیں جن میں تھپڑمارنے کا الزام بھی شامل ہے۔

گیبسی لیسکی کا کہنا ہے کہ عدالت کی جانب سے سنائی گئی سزا میں وہ وقت بھی شامل ہے جو ان کی موکلہ نے زیر حراست گزارا جس کے بعد انہیں آئندہ موسم گرما میں رہا کردیا جائے گا۔

خیال رہے کہ احد تمیمی کے خلاف مقدمے کی سماعت کا آغاز 13 فروری کو فوجی عدالت میں ہوا تھا جہان ان کی وکیل کی جانب سے مقدمے لیے اوپن ٹرائل کی درخواست کی گئی تھی جسے عدالت نے مسترد کردیا تھا۔


اسرائیلی فوجیوں کےآگ ڈٹ جانےوالی فلسطینی لڑکی پرفرد جرم عائد


یاد رہے کہ واضح رہے کہ 2 جنوری 2018 کو قابض اسرائیلی فوجیوں کو تھپڑ رسید کرنے والی فلسطینی لڑکی احمد تمیمی پر اسرائیل کی فوجی عدالت نے فرد جرم عائد کی تھی۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال 15 دسمبر کو احمد تمیمی کو اسرائیلی فوجی کو تھپڑ مارنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا، اس ان کی عمر16 برس تھی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں