site
stats
خیبر پختونخواہ

پاناما کیس، تحریک انصاف کے وکلاء کی تبدیلی کا امکان

اسلام آباد : تحریک انصاف کی لیگل کمیٹی کے اجلاس میں عمران خان نے پاناما کیس میں وکلاء کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کردیا جس کے بعد وکلا کی ٹیم میں تبدیلی کا امکان ہے.

تفصیلات کے مطابق پاناما کیس میں آج سپریم کورٹ میں ہونے والی سماعت میں تحریک انصاف کے وکلاء کی کارکردگی کے حوالے سے انصاف لیگل کمیٹی کا اہم اجلاس بنی گالہ میں منعقد ہوا جس میں تحریک انصاف کے وکلاء کے دلائل اور کارکردگی پر نگاہ ڈالی گئی۔

ذرائع کے مطابق اجلاس کے دوران پارٹی رہنماؤں نے وکیل نعیم بخاری اور حامد خان کی کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ حامد خان جارحانہ انداز میں کیس لڑ نے میں ناکام رہے ہیں۔ رہنماؤں نے مطالبہ کیا کہ حامد خان کی جگہ بابر اعوان کو پاناما کیس میں وکیل مقرر کیا جائے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ خود سربراہ تحریکِ انصاف عمران خان بھی اپنے وکلاء کی مایوس کن کارکردگی پر نالاں ہیں اور نعیم بخاری سے بالکل مطمئن نہیں ہیں۔

واضح رہے کی عوامی مسلم لیگ کے سربراہ اور تحریک انصاف کے اہم حلیف شیخ رشید پہلے ہی وکلاء کی تبدیلی کا مشورہ دے چکے ہیں۔

ذرائع کے مطابق عمران خان کی لندن کے دورے سے واپسی کے بعد پاناما کیس میں تحریک انصاف کے وکیل کی تبدیلی کے لیے درخواست جمع کرانے کا امکان ہے۔

دوسری جانب تحریک انصاف کے ترجمان نے اس بات کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایسی کوئی بات نہیں، وکلا کی ٹیم میں کوئی تبدیلی نہیں کی جارہی، عمران خان اپنے وکلا کی کارکردگی سے مطمئن ہیں۔

اے آر وائی نیوز کے ایک پروگرام میں شریک پی ٹی آئی رہنما علی زیدی نے کہا کہ حامد خان وکیل ہیں ان کی مرضی ہے کیس کو کیسے لے کر چلتے ہیں، ہر شخص کو معلوم ہے کہ نواز شریف پھنس چکے ہیں اس لیے قطرے شہزادے کو بھی اس میں شامل کرلیا گیا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top