The news is by your side.

Advertisement

میٹرک کے امتحانات میں پیپر آؤٹ ہونا اور نقل معمول بن گیا

کراچی : میٹرک کے امتحانات میں پیپر آؤٹ ہونا اور نقل معمول بن گیا، آج بھی دسویں جماعت کا ریاضی اور نویں جماعت کا کیمسٹری کا پرچہ مقررہ وقت سے قبل ہی آوُٹ ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق میٹرک کے پرچے انتظامیہ کے کنٹرول سے باہر ہوگئے، کراچی میں آج ہونے والا ریاضی کا پرچہ مقررہ وقت سے قبل ہی آوُٹ ہوگیا
اور مختلف سوشل میڈیا گروپس میں گردش کرتا رہا جبکہ حل پرچے کی کاپیاں فروخت ہونے لگیں۔

امتحانی مراکز کے باہر ضلعی انتظامیہ اقدامات نہ کر سکی ، ناظم امتحانات کا کہنا ہے کہ پرچے بورڈ سے نکلنے کے بعدبورڈ کی ذمہ داری ختم ہوجاتی ہے ، امتحانی مرکز کی ذمہ داری ہے پرچہ باہر نہ نکلے ، تمام مراکز پر پرچہ بروقت پہنچایا گیا۔

سکھر ، نوابشاہ اور ںوشہرو فیروز میں بھی پرچے آؤٹ کرنے والوں کو لگام نہ ڈالی جاسکی، نویں جماعت کا کیمسٹری کا پیپر وقت سے پہلےامتحانی مراکز سے باہرآگیا۔

لاڑکانہ میں نقل مافیا نے واٹس ایپ گروپ بنالیا، طلبہ واٹس ایپ گروپ پراساتذہ کی زیر نگرانی نقل کرتے رہے، امتحانی مراکز کے باہر نقل کرانے والوں کا رش
رہا اور حل شدہ پیپر با آسانی مراکز کے اندر پہنچایا جارہا ہے۔

دوسری جانب چیئرمین میٹرک بورڈ نےاپنے بیان میں کہا کہ آج تمام سینٹرزپرپرچہ وقت پرشروع ہوا ہے ، کراچی میں443 سینٹرزقائم کیےگئےہیں ۔ 80سینٹرز پر پیپر دیر سے پہنچا تھا۔

چیئرمین میٹرک بورڈ کا کہنا تھا کہ کیمٹی بنائی ہے جوانکوائری کررہی ہے، کمیٹی کو2دن میں رپورٹ دینے کا کہا ہے جبکہ نثار کھوڑونےبورڈکوسختی کرنے کا کہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں