The news is by your side.

امریکا نے کورونا کی دوا "پیکسلووڈ” کے استعمال کی منظوری دے دی

نیو یارک : کورونا وائرس کے علاج کیلئے امریکی حکومت نے تمام فارماسسٹ کو فائزر کی گولی استعمال کرنے کی منظوری دے دی۔

اس حوالے سے امریکی ادارے فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن نے فائزر کی کورونا وائرس کے علاج کے لیے گولی استعمال کرنے کی منظوری دے دی ہے۔

امریکی دواساز کمپنی فائزر کی تیار کردہ گولی پیکسلووڈ بیماری کے شدید ہونے کے خطرے کو 90 فیصد تک کم کرسکتی ہے۔

ادارے کا کہنا ہے کہ جن مریضوں نے کوویڈ19 کے علاج مثبت تجربہ کیا ہے وہ اپنے تمام ٹیسٹ اور ادویات کی فہرست فارماسسٹ کے پاس لے کر آئیں۔

فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن کے مطابق پیکسلووڈ ایک تحقیقاتی سارس- سی او وی ٹو پروٹیز روکنے والی اینٹی وائرل تھراپی دوا ہے، جسے خاص طور پر تیار کیا گیا ہے تاکہ اسے انفیکشن کی پہلی علامت یا کسی مریض کے متاثر ہونے کے بعد تجویز کیا جاسکتا ہے۔

ادارے کے جاری بیان میں مزید بتایا گیا کہ فائزر کی پیکسلووڈ گولیاں اس وقت بہت زیادہ مؤثر ہیں جب اسے بیماری کے ابتدائی مراحل میں استعمال کرایا جائے۔

واضح رہے کہ یماری کی اولین علامات سامنے آنے کے 5 دن کے اندر اس دوا کا استعمال کرنے کا مشورہ دیا گیا ہے۔

فائزر نے دسمبر2021 میں بتایا تھا کہ یہ دوا زیادہ خطرے سے دوچار افراد کو کوویڈ سے متاثر ہونے پر ہسپتال میں داخل ہونے اور موت سے بچانے کے لیے لگ بھگ 90 فیصد تک مؤثر ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں