ڈوپنگ کیس، پی سی بی نے احمد شہزاد پر 4 ماہ کے لیے پابندی عائد کردی ahmed shehzad
The news is by your side.

Advertisement

ڈوپنگ کیس، پی سی بی نے احمد شہزاد پر 4 ماہ کے لیے پابندی عائد کردی

لاہور: پاکستان کرکٹ بورڈ نے اوپنر بلے باز احمد شہزاد پر اینٹی ڈوپنگ قواعد کی خلاف ورزی کرنے پر 4 ماہ کے لیے پابندی عائد کردی۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ نے قومی کرکٹر احمد شہزاد ڈوپ ٹیسٹ مثبت آنے پر چار ماہ کے لیے پابندی عائد کردی ہے جس کا اطلاق 10 جولائی 2018 سے ہوگا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے ٹریبونل کے سامنے کرکٹر احمد شہزاد نے قبول کیا کہ انہوں نے پاکستان کرکٹ بورڈ کے قواعد کی خلاف ورزی کی ہے لیکن ان کا یہ اقدام دھوکہ دینے کے لیے نہیں تھا، احمد شہزاد کی درخواست پر عملدرآمد کرتے ہوئے پی سی بی نے آرٹیکل 8-6 کے تحت پابندی لگائی۔

اوپنر بلے باز پر عائد پابندی 11 نومبر کو ختم ہوگی، احمد شہزاد کا ڈوپ ٹیسٹ 21 جون کو مثبت آیا تھا، پی سی بی نے احمد شہزاد کو سینٹرل کنٹریکٹ میں بھی شامل نہیں کیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ پی سی بی نے کرکٹر کو 10 جولائی کو چارج شیٹ جاری کرتے ہوئے ہر قسم کی کرکٹ سے معطل کرکے جواب طلب کرلیا تھا۔

احمد شہزاد پاکستان کے پہلے کھلاڑی نہیں ہیں جن کا ڈوپ ٹیسٹ مثبت آیا ہے ماضی میں شعیب اختر، محمد آصف، عبدالرحمان، رضا حسن اور کئی کرکٹرز کو ڈوپ ٹیسٹ مثبت آنے پر پابندی کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

احمد شہزاد پاکستان کی جانب سے 13 ٹیسٹ، 81 ون ڈے انٹرنیشنل اور 57 ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچز کھیل چکے ہیں، وہ پاکستان کی جانب سے تینوں فارمیٹس میں سنچری بنانے والے پہلے بلے باز ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں