spot_img

تازہ ترین

سندھ اسمبلی کے نو منتخب ارکان نے حلف اٹھالیا

کراچی : سندھ اسمبلی کے 148 نو منتخب ارکان...

مسلم لیگ ن 108 ارکان کے ساتھ قومی اسمبلی کی بڑی جماعت بن گئی

اسلام آباد : مسلم لیگ ن108 ارکان کے ساتھ...

سندھ اسمبلی کے نو منتخب ارکان آج حلف اٹھائیں گے

کراچی : سندھ اسمبلی کے نو منتخب ارکان آج...

بلاول بھٹو نے وزیر اعلیٰ، اسپیکر و ڈپٹی اسپیکر سندھ اسمبلی کے امیدواروں کا اعلان کر دیا

کراچی: چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے...

پنجاب اسمبلی کے نو منتخب اراکین نے حلف اٹھالیا

لاہور : پنجاب اسمبلی کے نومنتخب اراکین نے حلف...

پینٹاگون نے حساس دستاویزات افشا ہونے کو امریکی سلامتی کیلئے خطرہ قرار دے دیا

واشنگٹن: امریکی محکمہ دفاع پینٹاگون نے حساس دستاویزات افشا ہونے کو امریکی سلامتی کیلئے خطرہ قرار دے دیا اور کہا امریکا اس اہم معاملے پر اتحادی ممالک کے ساتھ رابطے میں ہے۔

تفصیلات کے مطابق امریکی محکمہ دفاع پینٹاگون نے حساس دستاویزات افشا ہونے پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ حساس دستاویزات کا لیک ہوناقومی سلامتی کیلئے خطرہ ہے ، سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر خفیہ دستاویزات کے اصلی یا نقلی ہونے کی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

ترجمان وائٹ ہاؤس جان کربی نے اس حوالے سے پریس بریفنگ میں بتایا کہ صدر بائیڈن کو خفیہ فوجی دستاویزات کے متعلق آگاہ کیا جا چکا ہے، امریکا اس اہم معاملے پر اتحادی ممالک کے ساتھ رابطے میں ہے۔

گزشتہ ہفتے امریکا اور نیٹو کا یوکرین جنگ سے متعلق خفیہ منصوبہ سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پرجاری ہوا تھا، جس نے امریکی حساس اداروں کی سیکیورٹی پر سوالات اٹھا دئیے۔

دستاویزات میں مبینہ طورپر ایسے چارٹس اور تفصیلات شامل ہیں، جن میں ہتھیاروں کی ترسیل، بٹالینز کی تعداد اور دیگر حساس معلومات موجود ہیں۔

ان خفیہ دستاویزات میں یوکرین کو روس کے خلاف جارحانہ مقابلہ کرنے کے لیے تیار کرنے سے متعلق امریکہ اور نیٹو کے منصوبوں کی تفصیلات درج ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ یہ تفصیلات موسم بہار کے دوران روسی فوج کے خلاف یوکرین کے عسکری حملوں سے متعلق ہیں، یہ دستاویزات تقریباً پانچ ہفتے پرانی ہیں اور ان میں سے تازہ ترین دستاویز میں یکم مارچ کا حوالہ موجود ہے۔

اخبار کے مطابق ایک دستاویز میں یوکرین کی 12 جنگی بریگیڈز کا تربیتی پروگرام تک موجود ہے اور اس میں کہا گیا ہے کہ ان میں سے نو کی تربیت امریکہ اور نیٹو کی فورسز نے کی۔ اسی دستاویز میں 250 ٹینکوں اور 350 سے زائد میکینائزڈ گاڑیوں کی ضرورت کا بھی ذکر کیا گیا ہے۔

یہ بھی کہا گیا ہے کہ ان دستاویزات میں یوکرینی فوجی کنٹرول کے تحت گولہ بارود پر ہونے والے اخراجات کی تفصیلات بھی موجود ہیں۔ ان میں امریکی ساختہ آرٹلری راکٹ سسٹم یا ایچ آئی ایم اے آر ایس پر آنے والے اخراجات بھی شامل ہیں۔ یہ امریکی آرٹلری راکٹ سسٹم یوکرین میں روسی فوج کے خلاف انتہائی مؤثر ثابت ہوا ہے۔

رپورٹ میں ایسے فوجی تجزیہ کاروں کے تجزیے بھی شامل ہیں، جنہوں نے متنبہ کیا ہے کہ بعض دستاویزات کو روس گمراہ کن اطلاعات پھیلانے کی اپنی مہم میں استعمال کرنے کی خاطر ممکنہ طور پر تبدیل بھی کرسکتا ہے۔

Comments

- Advertisement -