The news is by your side.

Advertisement

ستم ظریفی ہے کہ قانون سازی میں شامل لوگ قانون کو مطلوب ہیں: فردوس عاشق

اسلام آباد: معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ کیسی ستم ظریفی ہے کہ قانون سازی اور مشاورت میں شامل لوگ ہی قانون کو مطلوب ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ قانون سازی سمیت دیگر امور پر مشاورت میں وہ لوگ شامل ہیں جو خود پاکستان کے قانون کو مطلوب ہیں، یہ کیسی ستم ظریفی ہے۔

معاون خصوصی نے مزید لکھا کہ پوری کی پوری ن لیگ مفروروں کے پاس ڈیرہ ڈالے بیٹھی ہے، جیسے علاج کرانا ہر قیدی کا حق ہے، ویسے جرم کا حساب لینا بھی قانون کا حق اور تقاضا ہے۔

خیال رہے کہ مسلم لیگ ن کی مرکزی قیادت اس وقت لندن میں موجود ہے، ن لیگی رہنماؤں نے گزشتہ روز برطانوی دارالحکومت میں بیٹھک جمائی تھی، یہ اجلاس ایجویئر روڈ پر مقامی ریسٹورنٹ میں منعقد کیا گیا تھا، جس میں شہباز شریف، ایاز صادق، خواجہ آصف، احسن اقبال، پرویزرشید، اسحاق ڈار، خرم دستگیر، مریم اورنگ زیب اور دیگر نے شرکت کی۔

یہ بھی پڑھیں:  ن لیگ کی مرکزی قیادت کی لندن کے ریسٹورنٹ میں بیٹھک

شہباز شریف نے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ ہم چیف الیکشن کمشنر کے معاملے پر اتفاق رائے چاہتے ہیں لیکن پی ٹی آئی حکومت سے ماضی قریب کا تجربہ مایوس کن ہے، نواز شریف صحت یابی کے بعد ڈاکٹرز کے مشورے سے پاکستان جائیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں