The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں لوگوں نے بڑے پیمانے پر سونے کی تلاش شروع کر دی

ریاض: سعودی عرب میں لوگوں نے بڑے پیمانے پر سونے کی تلاش شروع کر دی جس سے سعودی آثار قدیمہ کو خطرات لا حق ہو گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سعودی عرب کے ماہر آثار قدیمہ عبداللہ المسند کی جانب سے ایک ویڈیو جاری کی گئی ہے جس سے معلوم ہوتا ہے کہ لوگ سونے کی تلاش کس جوش و خروش کے ساتھ کر رہے ہیں، تاہم سونے کے لیے کی جانے والی کھدائیوں سے آثار قدیمہ کو نقصان بھی پہنچ رہا ہے۔

ویڈیو کے مطابق کچھ لوگ سعودی عرب کے ایک تاریخی مقام پر چٹانوں میں کھدائیاں کرتے ہوئے پائے گئے، معلوم ہوا کہ وہ لوگ سونے کی تلاش میں کھدائی کر رہے تھے لیکن آثار قدیمہ کو محفوظ رکھنے کے لیے کوئی اقدامات نہیں کیے گئے، چٹانوں کی اطراف کاٹھ کباڑ جمع ہونے کے باعث تاریخی مقامات کی خوب صورتی بھی متاثر ہوئی۔

مقامی لوگوں میں سونے کی تلاش کے لیے جادو ٹونا بھی مشہور ہے، ایک عرب جریدے کی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا تھا کہ لوگ سونے کی تلاش کے لیے تاریخی مقامات پر جادو ٹونا کر رہے ہیں، بتایا گیا کہ یہ ایک روایتی طریقہ ہے جو ہزاروں سال سے رائج ہے، سونے کی تلاش کے لیے جادو ٹونے سے مدد لی جاتی ہے۔

لوگ سمجھتے ہیں کہ چوں کہ مصر کے فرعونوں کو مصری عقیدے کے مطابق سونے چاندی اور دیگر قیمتی اشیا کے ساتھ دفنایا جاتا تھا اس لیے ایسے کسی قدیم مقام پر کھدائی سے وہ اچانک مالا مال ہو سکتے ہیں، اس کے لیے وہ دور دراز کے مقامات پر منتخب جگہوں پر کھدائی کرتے ہیں۔

سعودی ماہر آثار قدیمہ نے صورت حال کے پیش نظر حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ تاریخی مقامات کو تخریبی سرگرمیوں سے بچانے کے لیے اقدامات کرے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں