17.1 C
Ashburn
ہفتہ, مئی 25, 2024
اشتہار

پیرو کے وزیر اعظم نے آڈیو لیک ہونے پر استعفی دے دیا

اشتہار

حیرت انگیز

لیما: خاتون سے ’محبت کے اظہار‘ نے وزارت عظمیٰ چھین لی، پیرو کے وزیر اعظم آڈیو لیک ہونے کے بعد مستعفی ہو گئے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس میں کہا گیا ہے کہ پیرو کے وزیر اعظم البرٹو اوٹارولا نے منگل کو ایک بیان میں کہا کہ انھوں نے آڈیو لیک سامنے آنے پر استعفیٰ دے دیا ہے۔

57 سالہ پیرو وزیر اعظم پر 25 سالہ خاتون کو محبت میں فائدے پہنچانے کا الزام عائد کیا گیا تھا، مبینہ آڈیو ریکارڈنگز میں البرٹو کو اپنا اثر و رسوخ استعمال کرتے ہوئے خاتون کو سرکاری ٹھیکے دلانے کی بات کی گئی ہے۔

- Advertisement -

البرٹو اوٹارولا نے استعفیٰ منگل کو ٹیلی وژن پروگرام ”پینوراما“ میں ریکارڈنگ نشر کیے جانے کے بعد دیا، وزیر اعظم البرٹو نے الزامات کی تردید کرتے ہوئے بتایا کہ انھیں سیاسی مخالفین نے پھنسایا ہے۔

انھوں نے کہا یہ ریکارڈنگ 2022 میں وزارت عظمیٰ سنبھالنے سے پہلے کی گئی تھی، ان کے حریفوں نے ریکارڈنگ میں ہیرا پھیری اور ترمیم کی ہے، آڈیو لیک میں ستاون سالہ البرٹو خاتون سے کہتے ہیں ’’مجھے بتاؤ پھر، مائی لو۔۔ تاکہ ہم بات کر سکیں۔ تم جانتی ہو کہ یہ چیزیں پریشان کن اور تکلیف دہ ہیں، لیکن تم یہ بھی جانتی ہو کہ میں تم سے پیار کرتا ہوں۔‘‘

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں