The news is by your side.

Advertisement

سابق صدرپرویز مشرف یکم مئی کو پاکستان آئیں گے

اسلام آباد : سابق صدر پرویز مشرف کے وکیل سلیمان صفدر نے کہا ہے کہ ان کے موکل 2 مئی کو خصوصی عدالت میں پیش ہونے کے لیے پرعزم ہیں، خاندان کےمطابق وہ یکم مئی کو پاکستان آئیں گے۔

تفصیلات کے مطابق پرویز مشرف کے وکیل سلیمان صفدر نے اے آر وائی نیوز سے خصوصی بات چیت کرتے ہوئے کہا پرویزمشرف کے خاندان کےمطابق وہ یکم مئی کوپاکستان آئیں گے، وہ 2 مئی کو خصوصی عدالت میں پیش ہونے کے لیے پرعزم ہیں۔

سلیمان صفدر کا کہنا تھا پرویزمشرف خود اوران کےاہل خانہ پاکستان آنے پر زور دے رہے ہیں، ان کی صحت کومدنظر رکھتے ہوئے معالج کی اجازت اہم ہے، ان کی طبیعت ٹھیک نہیں،اونچ نیچ ہوتی رہتی ہے۔

یاد رہے سپریم کورٹ نے پرویزمشرف کے ٹرائل سےمتعلق فیصلہ سناتے ہوئے کہا تھا کہ 2 مئی کومشرف نہیں آتے تو دفاع کےحق سےمحروم ہوجائیں گے، اور یہ بھی حکم دیا تھا کہ  ٹرائل کورٹ ان کی غیرموجودگی میں ٹرائل مکمل کرکے حتمی فیصلہ جاری کردے۔

مزید پڑھیں : اگر پرویز مشرف 2 مئی کو نہیں آتے تو دفاع کےحق سےمحروم ہوجائیں گے ،سپریم کورٹ کا فیصلہ

اس سے قبل 28 مارچ کوسابق صدر جنرل ( ر) پرویز مشرف کے وکیل نے خصوصی عدالت میں عندیہ دیا تھا کہ ان کے موکل 13 مئی کو وطن واپس آکر عدالت کے روبرو پیش ہوسکتے ہیں۔

ایک سماعت میں سپریم کورٹ نے پرویز مشرف کے سامنے تین آپشنز رکھے تھے، پہلا آپشن پرویز مشرف آئندہ سماعت پر ہوکر بیان ریکارڈ کروائیں، دوسرا آپشن اگر نہیں پیش ہوتے تو اسکائپ پر بیان ریکارڈ کروائیں اور تیسرا آپشن اگر وہ اسکائپ پر بھی بیان ریکارڈ نہیں کرواتے تو ان کے وکیل بیان ریکارڈ کروائیں۔

عدالت نے پرویز مشرف کے وکیل کی جانب سےالتواکی درخواست بھی مسترد کردی تھی، چیف جسٹس نے کہا تھا پرویزمشرف تو مکے شکے دکھاتے تھے، یہ نہ ہو کہ عدالت کو مکے دکھانا شروع کردیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں