The news is by your side.

Advertisement

خیبرپختونخوا میں ڈاکٹروں کا احتجاج چوتھے روز بھی جاری، مریض بے حال ہوگئے

پشاور : خیبرپختونخوا کے مختلف شہروں میں ڈاکٹرز کا احتجاج چوتھے روز بھی جاری ہے، اوپی ڈیز نہ کھلنے سے مریض رُل گئے، مریضوں کے لواحقین نے بھی ڈاکٹروں سے ہڑتال ختم کرنے کی اپیل کردی۔

پشاور میں ڈاکٹروں کی ہڑتال کا آج چوتھا روز تھا دور دراز علاقوں سے آئے مریضوں کو مشکلات کاسامنا کرنا پڑرہا ہے۔ پشاورمیں ڈاکٹروں اورحکومت کی لڑائی میں مریض رل گئے۔

خیبر پختونخواہ کے تمام سرکاری اسپتالوں میں ڈاکٹروں کی کی ہڑتال کو چوتھے روز ہوگیا۔ ڈاکٹروں نے ایمرجنسی کےعلاوہ مکمل کام بند کر رکھا ہے۔

طبی سہولیات کی عدم فراہمی کے باعث مریض دربدرکی ٹھوکریں کھانے پرمجبور ہیں۔ اس کے علاوہ بنوں اور سوات میں بھی اسپتال ویران ہیں اور مریضوں کا کوئی پرسان حال نہیں۔

مزید پڑھیں: کے پی اسپتالوں میں ڈاکٹرز کی ہڑتال، وزیر صحت ہشام انعام اللہ کی برطرفی کا مطالبہ

ڈاکٹرز کونسل نے وزیر صحت ہشام اللہ اور ڈاکٹر نوشیروان برکی کے خلاف مقدمہ درج کرنے اور ڈی ایس پی کو برطرف کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا نےڈاکٹروں کو منگل کو مذاکرات کے لیے بلالیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں