The news is by your side.

Advertisement

پی آئی اے انجینئرز کا شاندار کارنامہ، 2 سال ناکارہ کھڑے اے ٹی آر طیارے کو اڑان کے قابل بنادیا

کراچی : قومی ایئرلائن پی آئی اے انجینئرز نے شاندار کارنامہ انجام دیتے ہوئے دو سال ناکارہ کھڑے اے ٹی آر طیارے کو دوبارہ اڑان کے قابل بنا دیا، جس کے بعد فضائی بیڑے میں شامل اے ٹی آر طیاروں کی تعداد تین ہوگئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق قومی ایئرلائن پی آئی اے کے شبعہ انجینئرنگ کا ایک اور اہم سنگ میل عبور کرلیا، انجینرنگ ڈیپارٹمنٹ نے دو سال ناکارہ کھڑے اے ٹی آر طیارے کو دوبارہ سے اڑان کے قابل بنالیا

اے ٹی آر طیارہ مارچ 2018 سے گراؤنڈ کیا گیا تھا، انجینئرنگ ٹیم اور پی آئی اے کے محنتی کارکنوں نے اپنی مدد آپ کے تحت طیارے کو قابل پرواز بنایا اور ساتھ ہی پی آئی اے نے اپنے وسائل استعمال کر کے قیمتی زرمبادلہ کی بچت کی۔

اے ٹی آر طیارے کو آزمائشی پرواز کے بعد آج کراچی سے سکھر کی دوطرفہ معمول کی پروازوں پی کے 536 اور پی کے 537 کے لئے آپریٹ کیا گیا، پی آئی اے کے فضائی بیڑے میں اے ٹی آر 72طیاروں کی تعداد 03 ہو گئی ہے۔

مزید پڑھیں :پی آئی اے میں اصلاحات کے مثبت نتائج آنا شروع

یاد رہے چند روز قبل قومی ایئر لائن (پی آئی اے) کے شعبہ ٹیکنکل گراؤنڈ سپورٹ نے اہم کارنامہ انجام دیتے ہوئے ناکارہ گاڑیوں اور طیاروں کو تکنیکی مدد فراہم کرنے والے کروڑوں روپے مالیت کے آلات کو قابل استعمال بنا دیا تھا

ٹیکنکل گراؤنڈ سپورٹ کے عملے نے ناکارہ قرار دیے گئے کروڑوں روپے مالیت کے ٹگ ماسٹر، کنوئیر بیلٹ گاڑی، کوسٹرز اور فورک لفٹر کو دوبارہ سے اپنی مدد آپ کے تحت قابل استعمال بنا کر ادارے کو کروڑوں روپے کے نقصان سے بچایا۔

خیال رہے کہ اس سے قبل ایئرلائن کے کئی ناکارہ اور خراب ہوجانے والے طیاروں کی بھی مقامی طور پر مرمت کردی گئی تھی اور اس کے لیے بیرون ملک سے کسی ماہر کی خدمات نہیں لی گئیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں