The news is by your side.

Advertisement

پی آئی اے کے 2 طیارے بڑے حادثے سے بال بال بچ گئے

اسلام آباد : قومی ایئرلائن کی دو پروازیں حادثے سے بال بال بچ گئیں ، پائلٹس نے بڑی مہارت سے طیاروں کو لینڈ کیا ، جہازمیں عملے کے ساتھ تمام مسافر بھی محفوظ رہے۔

تفصیلات کے مطابق لاہورسے اسلام آباد آنیوالی قومی ایئرلائن کی پرواز حادثے سے بال بال بچ گئی ، ذرائع کا کہنا ہے کہ پی کے 650 کے انجن میں اچانک خرابی پیدا ہوگئی، جس کے بعد پائلٹ نے مہارت سے طیارے کو اسلام آباد ایئر پورٹ پرلینڈ کیا، جہاز میں عملے کے علاوہ 38 مسافرسوارتھے، تمام محفوظ رہے.

ترجمان پی آئی اے کا کہنا ہے کہ انجن میں کچھ چیز چلی گئی ، جس سے خرابی پیدا ہوئی ، پائلٹ نے خراب انجن کو سوئچ آف کرکے دوسرےانجن کی مدد سے طیارے کو لینڈ کرایا، طیارہ خیریت سے لینڈ ہوا تمام مسافر محفوظ ہیں۔

دوسری جانب پشاور سے شارجہ جانیوالی پی آئی اے کی پرواز بھی حادثےسے بچ گئی، ذرائع کا کہنا ہے کہ  پی کے 257 کے اڑان بھرنے کے کچھ دیر بعد طیارے کے سسٹم ٹرپ کرگئے ، جس سے ایئربس 320 کا اگلا وہیل بھی بند نہیں ہورہا تھا، پائلٹ نے وہیل کو بند کرنے کی بہت کوشش کی مگر بند نہ ہوسکا۔

ذرائع ایئرپورٹ کے مطابق کپتان نے طیارے کو مہارت سے دوبارہ پشاور ایئرپورٹ اتارلیا، طیارے کا شاک آبزرویو،اسٹینڈبائی ،آٹو ٹرسٹ،آٹو پائلٹ سسٹم بھی ٹرپ کرگیاتھا جبکہ ایف ایم اے میں بھی خرابی پیدا ہوگئی تھی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ طیارے میں 100سے زائد مسافر سوار تھے، پی آئی اے انجینئر طیارے کی فنی خرابی کو دور کرنے میں ناکام ہے ، ایئربس320طیارے کو گزشتہ روز بغیر مسافروں کے طیارے کو کراچی لایا گیا۔

مزید پڑھیں : ایئرٹریفک کنٹرولر کی مہارت، غیر ملکی طیارہ بڑے حادثے سے بچ گیا

یاد رہے چند روز قبل کراچی میں ایئرٹریفک کنٹرولر نے کمال مہارت کا مظاہرہ کرتے ہوئے غیرملکی طیارے کو بڑے حادثے سے بچا لیا تھا، جہاز میں 150 سے زائد مسافر سوار تھے، ذرائع کا کہنا تھا کہ طیارہ بھارتی فضائی حدود سے ہوتا ہوا کراچی ریجن میں داخل ہوا اور سندھ کے علاقے چھور کے مقام پر طیارہ آسمانی بجلی کی زد میں آیا، ایئر ٹریفک کنٹرولر نے مکمل رہنمائی کرتے ہوئے طیارے کو حادثے سے بچایا۔

ذرائع کے مطابق طیارہ 38ہزار فٹ بلندی پر کپتان سے بےقابو ہوگیا تھا، طیارہ کپتان سے بےقابو ہوکر 38ہزار بلندی سے 36ہزار بلندی پر آگیا تھا، کپتان نے ہنگامی بنیادوں پر اے ٹی سی کو میڈے میڈے کی کال دی، بعد ازاں ایئرٹریفک کنٹرولر نے کپتان کی رہنمائی کرکے طیارے کو دیگر طیاروں کے درمیان تصادم سے بچایا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں