site
stats
ضرور پڑھیں

پاکستان گرین ہاؤس گیسز میں کمی کے لیے کوشاں ہے: وزیر اعظم

Shahid Khaqan Abbasi

اسلام آباد: وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ پاکستان ماحول کو نقصان پہنچانے والی گیسز میں کمی پر کام کر رہا ہے۔ ہمارا مقصد عوام کو ماحولیاتی تبدیلی سے متاثر ہونے سے بچانا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم نے ماحولیاتی تبدیلی سے متعلق سائنس پالیسی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انسانیت کو ماحولیاتی تبدیلی کے چیلنج کا سامنا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ماحولیاتی تبدیلی ایک بڑاخطرہ ہے اور اسی کی طرف فوری توجہ دینا ہوگی۔ اسموگ کے روزمرہ زندگی پر بدترین اثرات آنکھیں کھولنے کے لیے کافی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان ماحولیاتی تبدیلی کے چیلنج سے نمٹنے کے لیے عمل پیرا ہے اور 20 فیصد ماحول کے لیے تباہ کن یعنی گرین ہاؤس گیسز کے اخراج میں کمی پر عمل کر رہے ہیں۔

مزید پڑھیں: ساہیوال کول پاور پلانٹ کا حکومتی اشتہار تنقید کی زد میں

وزیر اعظم نے مزید کہا کہ ماحولیاتی تبدیلی کے اثرات سے تمام ممالک متاثر ہو رہے ہیں۔ پاکستان اپنی 50 فیصد توانائی کی ضروریات گیس سے پوری کر رہا ہے جبکہ فرنس آئل سے بجلی پیدا کرنے والے کارخانوں کو گیس پر منتقل کر رہے ہیں۔

وزیر اعظم کےمطابق قابل تجدید توانائی کے شعبے پر توجہ دے رہے ہیں۔ آئندہ سال ملک میں فرنس آئل کی درآمد ختم ہو جائے گی۔ ’پاکستان میں گرین ہاؤس گیسز کا اخراج ایک فیصد سے بھی کم ہے‘۔

یاد رہے کہ اس سے قبل سابق وزیر اعظم نواز شریف کی خصوصی ہدایت پر ملک بھر میں 10 کروڑ مقامی پودے لگانے کے منصوبے کا آغاز کیا گیا تھا تاکہ ملک میں موسمیاتی تغیرات یعنی کلائمٹ چینج ے اثرات پر قابو پانے میں مدد مل سکے۔ منصوبے کے آغاز کے دن کو نیشنل گرین ڈے کا نام دیا گیا تھا۔

مذکورہ منصوبے کے لیے ساڑھے 3 ارب روپے کی رقم مختص کی گئی تھی جس میں سے 50 کروڑ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں خرچ کیے جانے تھے جبکہ بقیہ رقم صوبوں کو دی گئی۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں ۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top