The news is by your side.

Advertisement

بھارتی جارحیت پر وزیراعظم کا اظہار مذمت، انڈین ہائی کمشنر کی طلبی

اسلام آباد: وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ کشمیریوں کو تنہا نہیں چھوڑیں گے،زخمیوں کو لے جانے والی ایمبولینس پربھارتی فوج کی فائرنگ افسوس ناک ہے۔

بھارت کی تازہ ترین جارحیت کی وزیراعظم نوازشریف نے مذمت کردی اور کہا ہے کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں ریاستی جبراوربربریت سے عالمی توجہ ہٹانے کے لئے بزدلانہ اقدامات کررہا ہے، کشمیری بھائیوں کو تنہا نہیں چھوڑیں گے،کشمیریوں کی حقِ خود ارادیت کے لئے آواز بلند کرتے رہیں گے۔

اسی سے متعلق : بھارتی فوج کی وادی نیلم میں مسافر بس پر فائرنگ ،9شہری شہید

وزیراعظم نےکہا کہ وادی نیلم میں زخمیوں کو لے جانے والی ایمبولینس پرفائرنگ انتہائی افسوسناک ہے۔ ادھر وادی نیلم میں عام شہریوں کی شہادت پردفتر خارجہ نے بھارتی ہائی کمشنر کو طلب کیا اور بھارتی ہائی کمشنر کو احتجاجی مراسلہ بھی دیا گیا۔

دفتر خارجہ نے بھارتی ہائی کمشنر کو کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں عام نہتے اور معصوم لوگوں کی پر فائرنگ ناقابل برداشت عمل ہے اس صورتِ حال سے نمٹنے کے لیے ضروری ہے کہ 2003 میں کیے کی فائر بندی معاہدے پر اُس کی حقیقی روح کے تحت من و عن عمل درآمد کیا جائے۔

یہ پڑھیے : بھارتی فوج کی فائرنگ، 3 فوجی شہید، آئی ایس پی آر کی تصدیق

دفترِ خارجہ نے مزید کہا کہ اگر لائن آف کنٹرول پر بھارتی افواج کی بلا اشتعال فائرنگ کا سلسلہ جاری رہا اور نہتے عوام بھارتی بربریت کا نشانہ بنتے رہے تو پاکستان اپنے دفاع کا حق محفوظ رکھتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : بھارتی جارحیت: مشیر خارجہ سینیٹ کے اجلاس میں‌ طلب

ترجمان دفتر خارجہ نفیس ذکریا کہتے ہیں بھارتی جارحیت پرصرف بھارتی ہائی کمشنر کو بلاکر احتجاج نہیں کرتے بلکہ مختلف ممالک کے سفیروں اور او آئی سی کے ممبران کو بھی بھارتی جارحیت سے آگاہ کیا جا تا ہے اس حوالے دفترِ خارجہ اپنی ذمہ داریاں احسن طریقے سے ادا کررہا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں