The news is by your side.

Advertisement

کورونا سے متعلق اعداد و شمارکسی صورت نہ چھپائے جائیں، وزیراعظم

اسلام آباد : وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ کوروناسےمتعلق اعدادوشمارکسی صورت نہ چھپائے جائیں ، معلومات چھپانا قومی سلامتی خطرے میں ڈالنے کے مترادف ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت قومی رابطہ کمیٹی کا اجلاس ہوا، اجلاس میں صوبوں کے وزرائے اعلیٰ، عسکری حکام شریک ہیں جبکہ وفاقی وزرا،چیئرمین این ڈی ایم اے بھی اجلاس میں موجود ہیں۔

اجلاس میں ملک بھرمیں جاری لاک ڈاؤن اور کوروناوائرس کی موجودہ صورتحال کاتفصیلی جائزہ لیا گیا اور فیصلہ کیا گیا کہ کوروناسےمتعلق ڈیٹاکمانڈاینڈکنٹرول سینٹرجاری کرے گا۔

اجلاس میں صوبوں کو ڈیٹا کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر سے شیئر کرنےکی ہدایت کی گئی ، وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ کورونا سے متعلق اعداد و شمار کسی صورت نہ چھپائے جائیں، معلومات چھپانا قومی سلامتی خطرے میں ڈالنے کے مترادف ہوگا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ حکومتی اقدامات،اداروں کی محنت سےصورتحال کنٹرول میں ہے، الحمداللہ پاکستان میں کورونا وائرس کی صورتحال پریشان کن نہیں۔

انھوں نے مزید کہا کہ 14اپریل تک ایسےہی پابندیاں جاری رکھی جائیں گی اور 14 اپریل کےبعدجائزہ لےکرآئندہ کے فیصلے کریں گے۔

گذشتہ روز وزیراعظم عمران خان نے قومی رابطہ کمیٹی اجلاس میں سی پیک منصوبوں پرکام اور تعمیراتی انڈسٹری کھولنےکافیصلہ کیا تھا۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا غریب کےگھرکاچولہاجلےاس لیےکل تعمیراتی انڈسٹری کھول رہےہیں، مزدوروں کا روزگار انڈسٹری سے وابسطہ ہے، مزدورطبقہ حکومت کی اولین ترجیح ہے۔

اس سے قبل وزیراعظم کی زیر صدارت قومی رابطہ کمیٹی اجلاس میں کورونا وائرس کا پھیلاؤ روکنے کیلئے ملک بھرمیں لاک ڈاؤن چودہ اپریل تک بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا تھا جبکہ لاک ڈاون میں نرمی سے متعلق مشاورت پانچ اپریل کے بعد ہو گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں