The news is by your side.

Advertisement

فضل الرحمان کو مولانا کہنا علماء کی توہین ہے، وزیراعظم

ساہیوال : وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ سارے ڈاکو مل کرمجھے بلیک میل کررہے ہیں ، فضل الرحمان کرپٹ آدمی ہیں،ان کو مولانا کہنا علماء کی توہین ہے، اپوزیشن کے نامور ڈاکوؤں کی تنقیدکواعزازسمجھنا چاہیئے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے ساہیوال میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا سینیٹ انتخابات کیلئے ابھی سے ریٹ لگنا شروع ہوچکے ہیں ، ہمیں معلوم ہے کونسا سیاسی لیڈر پیسے لگا رہا ہے، سینیٹ میں پیسہ چلتا ہے یہ بہت اچھے سے جانتا ہوں ، سینیٹ الیکشن میں پیسے کی آفر مجھے  بھی ہوچکی ہے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ جن ارکان کو میں نے پارٹی سے نکالا انہوں نے 5،5 کروڑلیے تھے، ہم نے ووٹ بیچنے والوں کے خلاف پہلےتحقیقات کیں، تحقیقات میں  پتہ چلا کہ انہوں نے 5،5 کروڑ روپے پکڑے تھے، یہ کیسےممکن ہے پیسہ لگا کر سینیٹر بننے والاپیسہ نہیں بنائے گا۔

عمران خان نے کہا کہ سینیٹ الیکشن میں اوپن بیلٹنگ کیلئے قانون سازی کررہےہیں، 2 تہائی اکثریت نہ ہونے کے باوجود ترمیم پارلیمنٹ لے جارہے ہیں، کرپشن  روکنے کی ترامیم کے مخالف قوم کے سامنے بے نقاب ہوں گے۔

مولانا فضل الرحمان کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ فضل الرحمان کرپٹ آدمی ہیں،ان کو مولانا کہنا علما کی توہین ہے، وہ مدارس کے بچوں کو استعمال کر کے  اربوں پتی بنا، وہ خود کو قانون سے بالاتر سمجھتے ہیں، پی ڈی ایم کا کوئی مستقبل نہیں اس نے فیل ہی ہونا تھا۔

وزیراعظم نے کہا سارے ڈاکو  مل کرمجھے بلیک میل کررہے ہیں اور ایک بھگوڑا لیڈر لندن میں بیٹھ کر انقلاب لانا چاہتا ہے، یہ سب پارٹی کو اکٹھا رکھنے
کیلئے  حکومت جانے کی تاریخیں دیتے ہیں۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن اورحکومت مل کرپارلیمنٹ چلاتے ہیں، انہوں نے پہلے دن سے پارلیمنٹ کو این آراو مانگنے کیلئےاستعمال کیا، پارلیمنٹ میں عوامی مفاد کی جوبحث ہونی چاہیے تھی وہ نہیں ہوسکی۔

اپوزیشن کی جانب سے تنقید سے متعلق انھوں نے کہا کہ اپوزیشن کےنامورڈاکوؤں کی تنقیدکواعزازسمجھناچاہیے، اپوزیشن اگرمیری تعریف کرےتو میں اپنی توہین سمجھوں گا، سیاسی پشت پناہی کےبغیرسرکاری زمینوں پرقبضہ نہیں ہوسکتا۔

مریم نواز کے حوالے سے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ مریم نوازنے کھوکھرپیلس پر قبضہ مافیا سے اظہاریکجہتی کیا، کھوکھر برادران نے130کروڑ کی سرکاری زمین پر قبضہ کیا تھا ، خود کو مستقبل کا لیڈر کہنے والی مریم نواز مافیا کی حمایت کررہی ہیں، ان کے دورمیں ہر سیاسی رہنما نے سرکاری زمینوں پر قبضے کیے ، وزیراعظم قبضہ گروپس کی پشت پناہی کرے تو باقی کسی کو کون روکے گا، بڑے بڑے ڈاکوؤں اور قبضہ مافیا کو نہیں چھوڑا جائے گا۔

فارن فنڈنگ کیس سے متعلق عمران خان نے کہا کہ فارن فنڈنگ میں ہمیں پھنسانےوالےاب خودپھنس چکےہیں، اکاؤنٹس اسکروٹنی ہوئی توپی ٹی آئی کے  اکاؤنٹس شفاف نکلیں گے، ہم نےالیکشن کمیشن میں40ہزاراکاؤنٹس کاڈیٹادیاہے، چیلنج ہےیہ جماعتیں ایک ہزاراکاؤنٹس کی تفصیلات بھی نہیں دے سکتیں، سب کو پتا ہے اسامہ بن لادن نے کس کو پیسےدیےتھے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ جس فورم پراپوزیشن کےخلاف فیصلہ آئےوہ اس کونہیں مانتے، نیب ان کی کرپشن پکڑرہاہےیہ نیب کوبھی نہیں مانتے، ماضی میں یہ ججز سے اپنی مرضی کےفیصلےکراتےرہے، ن لیگ نےمرضی کافیصلہ نہ آنےپرسپریم کورٹ پرحملہ کیا۔

ملک بھر کے کسانوں کے حوالے سے وزیراعظم نے کہا کہ بدقسمتی سےابھی تک کسانوں پرخصوصی توجہ نہیں دے سکے تھے، کامیاب کسان پیکیج شروعات ہے، کسانوں کیلئے جامع پیکیج دیں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں