The news is by your side.

Advertisement

وزیر اعظم عمران خان کا افغان صدر اشرف غنی کو ٹیلی فون، خیریت دریافت کی

اسلام آباد : وزیر اعظم عمران خان نے افغان صدر اشرف غنی سے ٹیلی فونک رابطہ کیا اوران کی خیریت دریافت کی، وزیر اعطم کا کہنا تھا دہشت گردی کا واقعہ افغانستان کے لیے بڑا نقصان ہے۔

تفصیلات کے مطابق افغانستان میں دہشت گردی کے واقعے میں30 افراد کی ہلاکت پر وزیراعظم عمران خان نے افغان صدراشرف غنی کو ٹیلیفون کیا اور ان کی خیریت دریافت کی۔

وزیراعظم نے گزشتہ روز افغانستان میں ہونے والے دہشت گرد حملوں میں بےگناہ شہریوں کی جانوں کے ضیاع پر تعزیت اور افسوس کا اظہار کیا۔

ٹیلی فونک گفتگو میں وزیراعظم عمران خان نے دہشت گرد حملے کی مذمت کی اور افغان صدر کے محفوظ رہنے پر اطمینان کا اظہار بھی کیا۔

عمران خان نے مزید کہا خطے کے امن کیلئے افغانستان کی حمایت جاری رہے گی۔ عمران خان نے کہا کہ دہشت گرد دونوں ممالک کے لئے خطرہ ہیں بہتر روابط سے دہشت گردی کے ناسور کا خاتمہ کرنا ہوگا۔

مزید پڑھیں: صدر اشرف غنی کی ریلی سمیت افغانستان میں دو دھماکے، 30 افراد جاں بحق

واضح رہے کہ گزشتہ روز افغانستان میں مختلف مقامات پر ہونے والے دو دھماکوں میں30 افراد جاں بحق ہوگئے تھے۔ پہلا دھماکہ افغانستان کے وسطی صوبے پروان میں صدر اشرف غنی کی ریلی کے قریب ہوا۔

دھماکے کے وقت صدر اشرف غنی ریلی سے خطاب کر رہے تھے جو اس ہولناک دھماکے میں محفوظ رہے، دھماکہ ریلی کی طرف جانے والے راستے میں ایک چیک پوائنٹ کے نزدیک ہوا جب ایک موٹر سائیکل سوار خودکش بمبار نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔

پروان کے اسپتال ڈائریکٹر کے مطابق حملے میں 24 افراد جاں بحق اور 31 زخمی ہوئے، ہلاک اور زخمی ہونے والوں میں بڑی تعداد خواتین اور بچوں کی بھی ہے۔

کچھ ہی دیر بعد دارالحکومت کابل میں امریکی سفارتخانے کے نزدیک ایک اور دھماکہ ہوا افغان میڈیا کے مطابق دھماکے میں 6 افراد جاں بحق ہوئے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں