The news is by your side.

Advertisement

کراچی کی تعمیر و ترقی کے لیے وزیر اعظم عمران خان کا بڑا فیصلہ

کراچی میں پانی صاف کرنے خصوصاً سیوریج اور آبی آلودگی پر توجہ کی ضرورت ہے: وزیر اعظم

اسلام آباد: کراچی کی تعمیر و ترقی کے لیے وزیر اعظم عمران خان کی صدارت میں منعقد ہونے والے اجلاس میں سندھ انفرا اسٹرکچر دویلپمنٹ کمپنی کی تنظیم نو کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق آج وزیر اعظم کی زیر صدارت کراچی کی تعمیر و ترقی سے متعلق اجلاس منعقد ہوا، جس میں وفاق کے تعاون سے مکمل ہونے والے اور نئے ترقیاتی منصوبوں میں پیش رفت کا جائزہ لیا گیا، وزیر اعظم کو منصوبوں سے متعلق تفصیلی بریفنگ بھی دی گئی۔

اجلاس میں سندھ انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ کمپنی کی تنظیم نو کا اہم فیصلہ کیا گیا، بتایا گیا کہ سندھ ڈویلپمنٹ کمپنی کی استعداد کار میں اضافہ کیا جائے گا تاکہ ترقیاتی منصوبوں پر بروقت عمل درآمد یقینی ہو۔

اجلاس میں وزیر اعظم نے کہا کہ کراچی میں پانی صاف کرنے خصوصاً سیوریج اور آبی آلودگی پر توجہ کی ضرورت ہے، ملک کی ترقی کراچی کی ترقی سے وابستہ ہے، کراچی ملکی معیشت میں انجن آف گروتھ کا کردار ادا کرتا ہے، ترقی کے لیے ضروری ہے کہ بندرگاہیں اور نقل و حمل کو مزید بہتر بنایا جائے۔

اجلاس میں سندھ کے لیے وفاقی حکومت کے 162 ارب کے پیکیج کی پیش رفت، مکمل اور نامکمل منصوبوں، ترقیاتی منصوبوں اور پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت اہم منصوبوں پر بریفنگ دی گئی، بتایا گیا کہ سخی حسن، فائیو اسٹار اور کے ڈی اے فلائی اوورز کے ساتھ ساتھ 6.4 کلومیٹر طویل نشتر روڈ تعمیر کیا گیا، منگھوپیر سڑک کے ایک حصے کا افتتاح گزشتہ ہفتے کیا گیا، گرین لائن بس ریپڈ ٹرانزٹ سسٹم کا انفرا اسٹرکچر مارچ 2021 تک مکمل ہو جائے گا، بنارس سے جام چکرو تک 66 انچ کی پانی کی لائن کا 95 فی صد کام مکمل کر لیا گیا ہے، بقیہ کام اپریل تک مکمل کر لیا جائے گا، کراچی میونسپل کارپوریشن کے فائر فائٹنگ نظام کی اپ گریڈنگ کی جا رہی ہے، اس منصوبے پر ایک ارب سے زائد خرچ کیے جا چکے ہیں، منصوبے کے تحت 50 فائر ٹینڈرز سسٹم میں شامل کیے جائیں گے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں