The news is by your side.

Advertisement

وزیر اعظم کی گیس اوور بلنگ پر تحقیقات تیز کرنے کی ہدایت

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان سے وزیر پیٹرولیم غلام سرور خان کی ملاقات ہوئی جس میں وزیر اعظم نے عوام پر اضافی بوجھ ڈالنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کے احکامات دیے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان سے وزیر پیٹرولیم غلام سرور خان کی ملاقات ہوئی۔ وزیر اعظم نے وزیر پیٹرولیم کو اوور بلنگ پر تحقیقات تیز کرنے کی ہدایت کی۔

وزیر اعظم نے عوام پر اضافی بوجھ ڈالنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کے احکامات بھی دیے۔ وزیر پیٹرولیم غلام سرور خان کا کہنا تھا کہ زائد گیس بل وصولی کی ایک ایک پائی عوام کو واپس دی جائے گی، 30 جون تک صارفین کے کیسز کی تصدیق کی جائے گی۔

انہوں نے وزیر اعظم کو یقین دہانی کروائی کہ اوور بلنگ کے ذمہ داران کو عوام کے سامنے بے نقاب کیا جائے گا، کڑی سزا کے عمل سے کوئی بھی بچ نہیں پائے گا۔

سیاسی مخالفین کے بارے میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بلاول بھٹو اور آصف زرداری مودی کی زبان بول رہے ہیں۔

خیال رہے کہ اس سے قبل وفاقی وزیر نے ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ ایل این جی سے متعلق سپریم کورٹ میں کیس چل رہا ہے، اس لیے وفاقی حکومت ان معاہدوں پر نظرِ ثانی کرے گی۔

انہوں نے کہا تھا کہ ایل این جی ٹرمینل کا ایک معاہدہ 30 اپریل 2014 کو ہوا تھا، اس میں کل سرمایہ کاری 21 ملین ڈالر سے زائد تھی۔ ٹرمینل 2 جنوری 2018 میں شروع ہوا جب کہ معاہدہ یکم جولائی 2016 کو ہوا۔

غلام سرور خان کا مزید کہنا تھا کہ حکومت ایل این جی ٹرمینل ٹو پر 2 لاکھ 45 ہزار ڈالر یومیہ ادا کرتی ہے، دیکھا جائے گا کہ ایل این جی اور 2 ٹرمینلز کے معاہدے بدنیتی پر مبنی ہیں یا نہیں، ان پر 44 فیصد ایکویٹی دنیا بھر میں کہیں نہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں