The news is by your side.

Advertisement

عدالت نے وزیر اعظم عمران خان کو بیان ریکارڈ کرانے کے لیے طلب کر لیا

لاہور: مقامی عدالت نے وزیر اعظم عمران خان اور شہباز شریف کو بیان کے لیے طلب کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کی مقامی عدالت نے وزیر اعظم کے خلاف ہرجانہ کیس میں عمران خان اور میاں شہباز شریف کو بیان ریکارڈ کروانے کے لیے طلب کر لیا ہے۔

ایڈیشنل سیشن جج یاسر حیات نے کیس کی سماعت کی، عدالت نے آئندہ سماعت پر وزیر اعظم عمران خان اور اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کو بیان ریکارڈ کروانے کے لیے طلب کیا۔

دریں اثنا، عدالت نے ہرجانے کے دعوے کے ناقابل سماعت ہونے سے متعلق عمران خان کی درخواست واپس لیےجانے کی بنا پر نمٹا دی۔

وزیر اعظم کے وکلا نے یہ نکتہ اٹھایا کہ لاہور کی عدالت کو دعویٰ پر سماعت کا اختیار نہیں ہے، اس لیے اسے اسلام آباد منتقل کر دیا جائے۔

وکیل نے کہا شہباز شریف نے عمران خان کی جس تقریر کی بنیاد پر دعویٰ دائر کیا وہ تقریر لاہور میں نہیں، بلکہ اسلام آباد میں کی گئی تھی۔

قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے وزیر اعظم عمران خان کے خلاف 10 ارب روپے ہرجانے کا دعویٰ دائر کیا ہوا ہے، جس میں کہا گیا ہے کہ عمران خان نے اُن پر پنامہ لیکس پر رقم کی پیش کش کے بے بنیاد الزامات لگائے ہیں، اس لیے دس ارب ہرجانہ ادا کرنے کا حکم دیا جائے۔

عدالت نے وزیر اعظم اور اپوزیشن لیڈر کو بیان ریکارڈ کرانے کے لیے طلب کرتے ہوئے سماعت 6 اکتوبر تک ملتوی کر دی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں