The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم عمران خان کا وفاقی کابینہ میں ردوبدل کے معاملے پر ایک بار پھر غور

اسلام آباد : وزیراعظم عمران خان نے وفاقی کابینہ میں ردوبدل کے معاملے پر ایک بار پھر غور شروع کردیا ہے، ذرائع کا کہنا ہے کہ ردوبدل کافیصلہ کچھ عرصے قبل کیا گیا تھا تاہم دھرنے اور سیاسی صورتحال کے باعث فیصلہ موخر کردیا گیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے ایک بار پھر وفاقی کابینہ میں ردوبدل  کا فیصلہ کرلیا ، ذرائع کا کہنا ہے کہ اس حوالے سے کور کمیٹی میں مشاورت کی جائے گی، کابینہ میں ردوبدل کا فیصلہ کچھ وزارتوں میں ناقص کارکردگی پر کیا گیا۔

ذرائع نے بتایا کہ وزیراعظم نے کابینہ میں ردوبدل کافیصلہ کچھ عرصے قبل کرلیا تھا تاہم اسلام آباد دھرنے اور سیاسی صورتحال کے باعث فیصلہ موخر کیا گیا تھا، کچھ نئے لوگوں کو کابینہ میں شامل کرکے پرانے وزراء کو فارغ کیا جائے گا۔

مزید پڑھیں : وزیراعظم نے پی ٹی آئی کور کمیٹی کا اہم اجلاس آج طلب کرلیا

یاد رہے وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت پی ٹی آئی کور کمیٹی کا اجلاس آج شام پانچ بجے ہوگا، دوران اجلاس نواز شریف کی صحت اور ملکی سیاسی صورت حال کا جائزہ لیا جائے گا اور نوازشریف کی بیرون ملک روانگی کا آئینی وقانونی طور پر جائزہ لیا جائے گا، کورکمیٹی فضل الرحمان مارچ کے بعد کی صورتحال پر مشاورت کرے گی۔ جبکہ معاشی صورتحال، پارلیمانی امور اور مہنگائی پر بھی تبادلہ خیال ہوگا۔

واضح رہے رواں سال اپریل میں وزیراعظم عمران خان نے وفاقی کابینہ میں بڑی تبدیلیاں کرتے ہوئے کئی وزرا کے قلم دان تبدیل کردیئے تھے، فوادچوہدری کوسائنس و ٹیکنالوجی اور غلام سرور کو ایوی ایشن کی وزارت دی گئی، جب کہ میاں محمد سومرو سے ایوی ایشن کا اضافی چارج واپس لے لیا گیا تھا۔

اعجاز احمد شاہ کو وفاقی وزیر داخلہ ، شہریارآفریدی سیفران کے وزیرمملکت بنایا گیا تھا جبکہ اعظم سواتی کو پارلیمانی امور کا قلمدان دےدیا گیا تھا اور اسد عمر کی جگہ فی الحال عبدالحفیظ شیخ مشیر خزانہ مقرر کیے گئے تھے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں