site
stats
پاکستان

زہریلی لسّی پینے سے13افراد کی ہلاکت کا معمہ حل، دلہن سمیت3گرفتار

علی پور : زہریلا مشروب پینے سے تیرہ افراد کی ہلاکت کا معمہ حل کرلیا گیا، لسی میں چوہے مار زہر ملایا گیا تھا، پولیس نے نئی نویلی بہو سمیت تین افراد کو گرفتار کر کے مقدمہ درج کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق مظٖفر گڑھ کے علاقے علی پور میں زہریلی لسی پینے سے ہلاکتوں کا معاملہ پولیس نے حل کرلیا، واقعے کی تفتیش کے بعد معلوم ہوا کہ لسی میں چوہے مار زہر ملایا گیا تھا۔

نئی نویلی دلہن آسیہ نے زبردستی شادی کا انتقام لینے کیلئے دودھ میں زہر ڈالا، آسیہ بی بی نے اپنے چچا زاد شاہد اور اس کی ممانی کے ذریعے دودھ میں زہرملایا تھا، بعد ازاں امجد کی والدہ نے لاعلمی میں اسی دودھ میں مزید دودھ شامل کرکے لسی بنائی تھی۔

اس حوالے سے آرپی او ڈی جی خان سہیل تاجک نے میڈیا کو بتایا کہ بستی والوٹ کے رہائشی اکرم کے بیٹے امجد کی شادی ایک ماہ قبل آسیہ سے ہوئی تھی، شادی زبردستی کرائی گئی تھی جس کا انتقام آسیہ نے لیا۔

دلہن آسیہ بی بی اپنےچچازاد شاہد سے شادی کرنا چاہتی تھی، جس میں ناکامی پر اس نے انتقاماً یہ کارروائی کی، اس کارروائی میں اس کے ساتھ شاہد اوراس کی ممانی بھی شامل تھی۔


مزید پڑھیں: فیصل آباد میں زہریلا دودھ پینے سے سو افراد کی حالت غیر


تھانہ کنڈائی پولیس نے دہشت گردی، قتل ودیگردفعات کےتحت مقدمہ درج کرکے آسیہ بی بی شاہد اوراس کی ممانی زرینہ مائی کو گرفتارکر کے مقدمہ درج کرلیا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top